عطیہ کی فراہمی کیلئے چین کے ساتھ لگنے والی سرحد ایک دن کیلئے کھول دی جائے

سرینگر//چین نے پاکستان سے کہا ہے کہ وہ جمعہ کے دن ایک روز کیلئے اُس کے ساتھ لگنے والی سرحد کو کھول دے تاکہ کورونا وائرس کے پھیلائو کی وجہ سے پیدا صورتحال کا مقابلہ کرنے کیلئے ضروری عطیات پاکستانی علاقہ تک پہنچائی جاسکیں۔اطلاعات کے مطابق دونوں ممالک کی سرحد پر واقع کھونجیرب درہ عام طور پر یکم اپریل کو کھولا جاتا ہے جب مذکورہ درے سے برف پوری طرح پگھل جاتی ہے، تاہم اس سال مذکورہ سرحد کو کورو ناوائرس کے پھیلائو سے پیدا صورتحال کے پیش نظر غیر معینہ عرصہ کیلئے بند کیا گیا ہے۔اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ چین کے سفارتخانے نے پاکستان کی وزارت خارجہ کو ایک مکتوب روانہ کیا ہے کہ چین کے علاقہ زنگ جیانگ کا گورنر گلگت بلتستان خطے کیلئے ادویات اور ضروری سامان عطیہ کرنا چاہتے ہیں۔خط میں مزید لکھا ہے کہ زنگ جیانگ کا گورنر 2لاکھ عام ماسکس،2ہزارN.95قسم کی ماسکس،5وینٹی لیٹر،2ہزارٹیسٹنگ کٹس اور2ہزار خصوصی ط

سندھ طاس کمیشن کی میٹنگ ،ملتوی کرنے کی درخواست

نئی دہلی //نیوز ڈیسک //بھارت نے پاکستان سے کہا ہے کہ کورنا وائرس کی وبا ء مدنظر رکھتے ہوئے سالانہ سندھ طاس  کمیشن کی میٹنگ کو موخر کیا جائے ۔بھارت نے کہا ہے کہ یہ میٹنگ اس ہفتہ ہونے والی ہے ،تاہم پاکستان نے ابھی تک اس تعلق سے کوئی جواب نہیں دیا ہے ۔ یاد رہے کہ سندھ طاس کمیشن کی میٹنگ ہر سال بھارت اور پاکستان کے درمیان 31مارچ کو ہوتی ہے ۔ سندطاس آبی معاہدے کے تحت کمیشن کو سال میں ایک مرتبہ میٹنگ کرنی ہوتی ہے، جو باری باری پاکستان اور ہندستان میں منعقد ہوا کرتی آئی ہے ۔اس سے قبل کمیشن کی میٹنگ سال2018میں لاہور میں منعقد ہوئی تھی ۔عالمی اداہ صحت کی جانب سے کورنا وائرس کو ایک وباء قرار دینے کے بعد بھارت نے دونوں ممالک میں کورنا سے پیدا ہونے والے مسائل کی وجہ سے یہ میٹنگ موخر کرنے کی درخواست کی تھی ۔  

جموں کشمیر میں ’مواصلاتی بلیک آؤٹ ختم‘ کیا جائے:پاکستان

سرینگر// پاکستان نے ایک مرتبہ پھر بھارت سے کورونا وائرس پھیلائو کے پیش نظر جموں و کشمیر میں ’’مواصلاتی بلیک آؤٹ‘‘ ختم کرنے کا مطالبہ کیاہے۔ اسلام آباد میں ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران پاکستانی دفتر خارجہ کی ترجمان عائشہ فاروقی نے بھارتی حکومت پر زور دیا کہ وہ کورونا وائرس سے لاحق خطرے کے پیش نظر جموں و کشمیر میں’’ مواصلاتی بلیک آؤٹ ‘‘ختم کرے۔انہوں نے کہا کہ بھارتی انتظامیہ کشمیر کے عوام کو وائرس سے متعلق بنیادی معلومات سے محروم کررہا ہے۔عائشہ فاروقی نے کہا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے حالیہ دنوں میں سارک اجلاس میں اپنے ہم منصبوں کے ساتھ بات چیت کے دوران سارک کے عمل کو جاری رکھنے کے عزم اعادہ کیا۔  

بھارت میں11اموات،606 افرادمتاثر

نئی دلی //ہندوستان میں کوروناوائرس کے معاملات تیزی سے بڑھ رہے ہیں اور ملک میں اب تک اس کے 606 کیسز سامنے آچکے ہیں۔ مرنے والوں کی تعداد 11 تک پہنچ چکی ہے ۔وزارت صحت نے بدھ کے روز بتایا کہ ملک میں کورونا کے 606 معاملوں کی تصدیق ہوچکی ہے ۔جن میں 563مریض ہندوستانی ہیں جبکہ 43 کا تعلق بیرون ممالک سے ہے ۔خیال رہے ہندوستان کووڈ19 کے دوسرے اور تیسرے مرحلے میں ہے اوران دومرحلوں میں متاثرین اوراموات کی تعدادمیں اضافہ ہوتاہے۔مرکزاورریاستی سرکاریں کوروناوائرس کے پھیلاو کو روکنے کے لئے ہر ممکن کوشش کر رہی ہیں،اوران کوششوں کی ایک اہم کڑی کے بطورپورے ملک میں منگل اوربدھ کی درمیانی رات سے21روزہ لاک ڈاون شروع ہوچکاہے۔ سائنس دانوں نے اندیشہ ظاہر کیا ہے کہ اگر ملک میں متاثرہ آبادی اس رفتار سے بڑھتی رہی تو مئی کے دوسرے ہفتے تک ہندوستان میں کورونا کے 13 لاکھ مریض ہو جائیں گے۔ ہندوستان میں کورونا کے معامل

ممتا بنرجی کا 18وزرائے اعلیٰ کومکتوب

کلکتہ //وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے 18ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کو خط لکھ کر کہا ہے کہ لاک ڈائون کے درمیان پھنسے ورکروں کی حفاظت اور ان تک ضروری اشیاء کی فراہمی پر توجہ دی جائے ۔وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے اپنے خط میں کہا ہے کہ ریلوے ، ہوائی سروس اور بین ریاستی بس سروس بند ہیں ۔اس کی وجہ سے مختلف ریاستوں میں بنگال سمیت ملک کے دوسری ریاستوں کے ورکر اور یومیہ کام کرنے والے پھنسے ہوئے ہیں ، انہیں مالی قلت کا بھی سامنا ہے اس لئے ان لوگوں تک کھانے پینے کی اشیائ کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے ۔لاک ڈائون کے دوسرے دن وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کلکتہ شہر کے مختلف مارکیٹ اور علاقوں کا دورہ کرکے بازار اور مارکیٹ کا جائزہ لیا ۔وزیرا علیٰ نے ایک بار اپیل کی لاک ڈائون شہریوں کی حفاظت کے پیش نظر کیا گیا ہے ۔اس لئے غیر ضروری طور پر گھر سے باہر نہ نکلیں ، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ کھانے پینے کی اشیااور دیگر ضروری سامان ک

تازہ ترین