تازہ ترین

ہمیں بھارت کی شہریت دو یا واپس پاکستان بھیجو ،سابق جنگجوئوں کی بیویوں کا مطالبہ

 سرینگر/سابق جنگجوئوں کی پاکستانی بیویوں، جو اپنے شوہروں کے ساتھ نیپال کے راستے سے کشمیر آئی ہیں، نے جمعہ کو مطالبہ کیا کہ اُنہیں بھارت کی شہریت فراہم کی جائے اور اگر ایسا ممکن نہیں ہے تو پھر اُنہیں واپس پاکستان بھیجنے کے انتظامات کئے جائیں۔ مذکورہ خواتین کی نمائندگی کرتے ہوئے ایبٹ آباد پاکستان کی رہنے والی طیبہ نے نامہ نگاروں کو ایک پریس کانفرنس کے دوران بتایا''ہم کل ملاکر یہاں350خواتین ہیں۔۔۔ہم مطالبہ کرتی ہیں کہ ہمیں بھارت کی شہریت فراہم کی جائے ۔ہم حکومت ہندوستان اور یہاں کی ریاستی سرکار سے اپیل کرتی ہیں کہ ہمیں سفری دستاویزات فراہم کریں اور اگر ایسا ممکن نہیں ہے تو ہمیں واپس پاکستان ہی بھیج دیں''۔ مذکورہ خواتین نے وزیر اعظم نریندرا مودی،وزیر خارجہ ایس جے شنکر، ریاستی گورنر ایس پی ملک اور پاکستانی وزیر اعظم عمران خان سے اُن کا مسئلہ حل کرنے کیلئے مداخلت

جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع میں پُر اسرار دھماکہ، شہری زخمی

سرینگر/جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع میں جمعہ کو ایک پُر اسرار دھماکے میں ایک شہری زخمی ہوگیا۔ اطلاعات کے مطابق  28سالہ  جاوید احمد ڈارولد  محمد  عبد  اللہ  ڈار ساکنہ زاسونامی شہری کے گھر کے باہر دھماکہ ہوا جس سے وہ زخمی ہوگیا۔ ڈار کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ وہ ایک کباڑی ہے اور دھماکہ اُس وقت ہوا جب وہ کباڑے کے ساتھ ہی مصروف عمل تھا۔ زخمی ڈار کو ضلع اسپتال پہنچایاگیا جہاں سے اُسے سرینگر کے صدر اسپتال منتقل کیا گیا۔  

امرناتھ گپھا کے نزدیک دو یاتریوں کی موت واقع

سرینگر/جنوبی کشمیر کے پہلگام علاقے میں جمعہ کو امرناتھ گپھا کی طرف جارہے دو یاتری فوت ہوگئے۔ حکام کے مطابق 65سالہ شری کانت ساکنہ گجرات گپھا کی طرف جانے والے روایتی راستے، پہلگام کے شیشناگ علاقے میں فوت ہوگیا۔شری کانت کی موت کا سبب معلوم کیا جارہا ہے۔ ایک اور یاتری جس کی شناخت 55سالہ شیش کمار بھوشن ، ساکنہ جھارکھنڈکے طور ہوئی ہے،دوران شب نیند کی حالت میں فوت ہوگیا۔ اُس کی موت کی وجہ جاننے کیلئے بھی کارروائی جاری ہے۔  

ضلع راجوری میں بھی کنٹرول لائن پر ہند۔پاک افواج کے مابین گولیوں کا تبادلہ

سرینگر/ پونچھ کے بعدبھارت اور پاکستان کی افواج کے مابین جمعہ کو ضلع راجوری میں بھی کنٹرول لائن پر گولی باری کا تبادلہ ہوا ہے۔ ذرائع کے مطابق بھارت اور پاکستانی افواج نے آج صبح نوشیرا سیکٹر کے بابا کھوری علاقے میں ایک دوسرے کی اگلی چوکیوں کو نشانہ بناتے  ہوئے ہلکے اور درمیانہ ہتھیاروں کا استعمال کیا۔ اس واقعہ میں کسی بھی طرف سے کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی ہے۔ اس سے قبل آج صبح طرفین نے ضلع پونچھ میں ایک دوسرے کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔    

سوپور میں میوہ تاجروں کا ہائی وے پابندیوں کیخلاف احتجاجی دھرنا

سرینگر/شمالی کشمیر کے سوپور میں جمعہ کو فروٹ گروئورس نے مقامی فروٹ منڈی میں دھرنا کا اہتمام کیا جس کا مقصد سرینگر۔جموں قومی شاہراہ پر سیولین گاڑیوں کی نقل و حمل پر پابندیوں کیخلاف احتجاج کرنا تھا۔ مظاہرین نے پلے کارڈ اور بینر اٹھارکے تھے جن پر امر ناتھ یاتریوں کے حق میں استقبالی نعرے اور شاہراہ پر پابندیوں کیخلاف احتجاجی نعرے درج تھے۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ شاہراہ پر پابندیوں سے میوہ  تاجروں کو شدید نقصان کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے کیونکہ وادی سے باہر جانے والا اکثر میوہ وقت ضائع ہونے کی بنا پر راستے میں ہی سڑ جاتا ہے۔  انہوں نے کہا کہ میوہ سے بھری گاڑیوں کو شاہراہ پر گھنٹوں روکا جاتا ہے اور کبھی کبھی اُنہیں رات بھر رکنے کیلئے مجبور کیا جارہا ہے جس سے اُن میں لدا میوہ مارکیٹ تک پہنچنے سے پہلے ہی سڑ جاتا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ شاہراہ پر عاید پابندیوں کو ختم کر

ضلع پونچھ میں کنٹرول لائن پر ہند۔پاک افواج کے مابین گولی باری کا تبادلہ

سرینگر/بھارت اور پاکستان کی افواج کے مابین جمعہ کو ضلع پونچھ میں کنٹرول لائن پر گولی باری کا تبادلہ ہوا ہے۔ حکام کے مطابق پاکستانی افواج نے آج صبح بھارت کی اگلی چوکیوں کو نشانہ بناتے ہوئے مینڈھر کے منکوٹ علاقے میں ہلکے ہتھیاروں کا استعمال کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کی افواج نے پاکستان کی فائرنگ کا ''بھرپور'' جواب دیا۔ اس واقعہ میں کسی بھی طرف سے کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی ہے۔ طرفین کے مابین آخری اطلاعات ملنے تک گولیوں کا تبادلہ جاری تھا۔