تازہ ترین

کنٹرول لائن سے آر پار تجارتی سرگرمیاں معطل: وزارت داخلہ کا آرڈر

سرینگر/مرکزی وزارت داخلہ نے جمعرات کو ایک حکمنامہ جاری کرتے ہوئے کنٹرول لائن کے آر پار تجارت کو معطل کردیا۔ کشمیر کے منقسم حصوں کے مابین کنٹرول لائن سے تجارتی سرگرمیوں کو معطل کرنے کا فیصلہ لیتے ہوئے مرکزی وزارت داخلہ نے کہا کہ اس کراس ایل او سی ٹریڈ کا''غلط استعمال'' کیا جارہا تھا۔ وزارت داخلہ کے آرڈر میں بتایا گیا ہے''حکومت ہندوستان کو اطلاعات موصول ہورہی تھیں کہ ایل او سی ٹریڈ کا پاکستانی عناصر کے ہاتھوں غلط استعمال ہورہا تھا اور اس کو ہتھیار، کرنسی اور نشیلی چیزیں یہاں بھیجنے کیلئے کام میں لایا جاتا تھا''۔ آرڈر میں مزید بتایا گیا ہے کہ این آئی اے کے ہاتھوں کئی کیسوں کی تحقیقات کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے کہ کراس ایل او سی ٹریڈ کے ساتھ وابستہ افراد کا تعلق غیر قانونی تنظیموں کے ساتھ ہے جو علیحدگی پسندی کو بڑھاوا دے رہے ہیں۔ آرڈر کے مط

لوک سبھا پولنگ: پانچ بجے تک سرینگر میں 7فیصد ,کٹھوعہ میں72فیصد ووٹنگ ریکارڈ

سرینگر/جموں کشمیر کی دو نشستوں پر جمعرات کو لوک سبھا کی ووٹنگ کے دوران پانچ بجے تک مجموعی طور پر43.3فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی تھی۔ سرینگر ضلع کے اندر اس مدت تک سب سے کم 7  فیصد ووٹنگ ریکارڈ ہوئی تھی۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق سرینگر پارلیمانی نشست پرضلع بڈگام میں دن کے پانچ بجے تک 21.0فیصد ،ضلع گاندربل میں16.8فیصد جبکہ ضلع سرینگر میں7.oفیصدو وٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ سرینگر کی پارلیمانی نشست انہی تین اضلاع پر مشتمل ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ضلع ریاسی میں پانچ بجے تک69.8فیصد،کٹھوعہ میں69.8فیصد،اُدھمپور میں72.2فیصد،رامبن میں56.4فیصد،ڈوڈہ میں60.5فیصد اور ضلع کشتوار میں60فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ اُدھمپور پارلیمانی نشست انہی چھ اضلاع پر مشتمل ہے۔ ووٹنگ آج صبح سات بجے شروع ہوئی جو شام چھ بجے تک جاری رہے گی۔  

لوک سبھا پولنگ: تین بجے تک کٹھوعہ میں سب سے زیادہ 64.6فیصد ، سرینگر میں سب سے کم5.7فیصد ووٹنگ ریکارڈ

سرینگر/جموں کشمیر کی دو نشستوں پر جمعرات کو لوک سبھا کی دوسرے مرحلے کی ووٹنگ کے دوران تین بجے تک مجموعی طور پر38.5فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی تھی۔ اُدھمپور پارلیمانی نشست میں کٹھوعہ ضلع کے اندر اس مدت تک سب سے زیادہ یعنی64.4فیصد ووٹنگ ریکارڈ ہوئی تھی۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق سرینگر پارلیمانی نشست پرضلع بڈگام میں دن کے تین بجے تک 17.1فیصد ،ضلع گاندربل میں14.4فیصد جبکہ ضلع سرینگر میں5.7فیصدو وٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ سرینگر کی پارلیمانی نشست انہی تین اضلاع پر مشتمل ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ضلع ریاسی میں تین بجے تک62.7فیصد،کٹھوعہ میں64.4فیصد،اُدھمپور میں63.1فیصد،رامبن میں50.8فیصد،ڈوڈہ میں57.2فیصد اور ضلع کشتوار میں50.4فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ اُدھمپور پارلیمانی نشست انہی چھ اضلاع پر مشتمل ہے۔ ووٹنگ آج صبح سات بجے شروع ہوئی جو شام چھ بجے تک جاری رہے گی۔  

چاڈورہ میں پولنگ مرکز کے نزدیک فورسز کے ساتھ جھڑپوں میں تین زخمی

سرینگر/ایک خاتون سمیت تین شہری جمعرات کو وسطی کشمیر کے چاڈورہ علاقے میں اُس وقت زخمی ہوگئے جب فورسز اور مظاہرین کے درمیان ایک مقامی پولنگ مرکز کے نزدیک جھڑپیں ہوئیں۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ مظاہرین نے بڈگام ضلع کے ہفرو گائوں میں فورسز پر پتھرائو کیا جس کے جواب میں فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے پیلٹ فائر کئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ فورسز کی کارروائی میں ایک خاتون سمیت تین شہری زخمی ہوگئے۔ زخمی خاتون کو علاج کیلئے سرینگر منتقل کیا گیا جبکہ باقی ماندہ دو زخمیوں کا علاج چاڈورہ اسپتال میں جاری تھا۔ سرینگر۔بڈگام پارلیمانی نشست پر لوک سبھا انتخابات کے دوسرے مرحلے میں ووٹنگ جاری ہے۔  

لوک سبھا پولنگ: ریاست میں ایک بجے تک30فیصد ووٹنگ درج

سرینگر/جموں کشمیر کی دو نشستوں پر جمعرات کو لوک سبھا کی دوسرے مرحلے کی ووٹنگ کے دوران د ن کے ایک بجے تک مجموعی طور پر29.6فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ضلع بڈگام میں ایک بجے تک 11.4فیصد ،ضلع گاندربل میں11.0فیصد جبکہ ضلع سرینگر میں4.8فیصدو وٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ سرینگر کی پارلیمانی نشست انہی تین اضلاع پر مشتمل ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ضلع ریاسی میں ایک بجے تک49.2فیصد،کٹھوعہ میں49.7فیصد،اُدھمپور میں48.7فیصد،رامبن میں39.3فیصد،ڈوڈہ میں43.2فیصد اور ضلع کشتوار میں39.3فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ اُدھمپور پارلیمانی نشست انہی چھ اضلاع پر مشتمل ہے۔ ووٹنگ آج صبح سات بجے شروع ہوئی جو شام چھ بجے تک جاری رہے گی۔  

لوک سبھا پولنگ: ریاست میں11بجے تک17فیصد سے زیادہ ووٹنگ ریکارڈ

سرینگر/جموں کشمیر کی دو نشستوں پر جمعرات کو لوک سبھا کی دوسرے مرحلے کی ووٹنگ کے دوران صبح گیارہ بجے تک مجموعی طور پر17.8فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ضلع بڈگام میں گیارہ بجے تک 6.4فیصد ،ضلع گاندربل میں6.5فیصد جبکہ ضلع سرینگر میں2.3فیصدو وٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ سرینگر کی پارلیمانی نشست انہی تین اضلاع پر مشتمل ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ضلع ریاسی میں گیارہ بجے تک28.8فیصد،کٹھوعہ میں28.5فیصد،اُدھمپور میں28.7فیصد،رامبن میں19.5فیصد،ڈوڈہ میں28.6فیصد اور ضلع کشتوار میں23.6فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ اُدھمپور پارلیمانی نشست انہی چھ اضلاع پر مشتمل ہے۔ ووٹنگ آج صبح سات بجے شروع ہوئی جو شام چھ بجے تک جاری رہے گی۔  

لوک سبھا پولنگ: ریاست میں پہلے چار گھنٹوں کے دوران6فیصد ووٹنگ ، سرینگر میں1.23فیصد ریکارڈ

سرینگر/جمعرات کو صبح نو بجے تک جموں کشمیر کی دو نشستوں پر مجموعی طور پر6.1فیصد ووٹران نے اپنی رائے کا اظہار کیا تھا ۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق سرینگر کی پارلیمانی نشست پر محض1.23فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی تھی جبکہ اُدھمپور میں 8.6فیصد ووٹنگ درج کی گئی تھی۔ حکام کے مطابق تا ہم ووٹنگ کا سلسلہ سرینگر اور اُدھمپور حلقوں کے اندر پُر امن طریقے سے جاری  تھا۔  

کشمیر میں پولنگ والے علاقوں میں ہڑتال، انٹرنیٹ سروس معطل

سرینگر/سرینگر پارلیمانی حلقے میں آنے والے تین اضلاع، سرینگر، بڈگام اور گاندربل میں جمعرات کو ہڑتال کی جارہی ہے۔ ریاست کے سرینگر اور اُدھمپور پارلیمانی حلقوں میں آج لوک سبھا کیلئے دوسرے مرحلے کی پولنگ جاری ہے ۔ ہڑتال کی اپیل علیحدگی پسندوں نے کر رکھی تھی۔ ادھر حکام نے پولنگ والے علاقوں میں موبائیل انٹرنیٹ سروس معطل کر رکھی ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق یہ اقدام ''امن و قانون کی صورتحال'' بنائے رکھنے کیلئے اُٹھایا گیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق سرینگر، بڈگام اور گاندربل اضلاع میں تمام دکان اور کاروباری ادارے بند ہیں جبکہ سڑکیں بھی سنسان نظر آرہی ہیں۔  

لوک سبھا پولنگ: سرینگر میں کم اور اُدھمپور میں بھاری ووٹنگ جاری

سرینگر/سرینگر اور اُدھمپور پارلیمانی حلقوں میں لوک سبھا کیلئے دوسرے مرحلے کی پولنگ جمعرات کوجاری ہے ۔  جہاں سرینگر پارلیمانی حلقے میں صبح کم رفتار پر ووٹنگ شروع ہوئی، وہیں اُدھمپور حلقے سے بھاری ووٹنگ کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ دونوں حلقوں کے اندر پولنگ پُر امن طریقے سے جاری ہے۔ اُدھمپور کے کٹھوعہ حلقے سے موصولہ اطلاعات کے مطابق کٹھوعہ، ریاسی اور اُدھمپور اضلاع میں پولنگ سٹیشنوں پر رائے دہندگان کا رش ہے۔ ادھر سرینگر، بڈگام اور گاندربل اضلاع میں علیحدگی پسندوں کی اپیل پر مکمل ہڑتال کی جارہی ہے اور لوگ ایک ایک کرکے ہی پولنگ سٹیشنوں پر نظر آرہے ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق صبح نو بجے تک ضلع سرینگر میں 0.9فیصد، ضلع بڈگام میں 1.6فیصد اور ضلع گاندربل میں 1.2 فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی تھی۔ حکام نے پولنگ والے علاقوں میں موبائیل انٹرنیٹ سروس م