کورونا وائرس ۔۔۔۔ کشمیر میں مزید4کیس مثبت

سرینگر // بانڈی پورہ کے حاجن علاقے سے تعلق رکھنے والے مزید4افراد کے کورنا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق کے بعد جموں و کشمیر میں اس مہلک وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 11ہوگئی ہے جن میں 8کا تعلق کشمیر سے جبکہ 3کا تعلق جموں صوبے سے ہے۔ ریاستی سرکار کے ترجمان روہت کنسل نے بدھ کو سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پرلکھا’’ بانڈی پورہ سے تعلق رکھنے والے مزید 4افرد کی رپورٹ مثبت آئی ہے، ابتدائی معلومات سے پتہ چلا ہے کہ وہ سرینگر کے اُس مریض کے ساتھ نزدیکی رابطے میں رہے ہیں جسکی رپورٹ بدھ کومثبت آئی تھی‘‘۔کنسل کے مطابق ان پانچوںافراد نے حالیہ دنوں میں ایک ہی مذہبی تقریب میں حصہ لیا ہے۔ شیر کشمیر انسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ (سکمز) میں منگل دیر شام گئے داخل کئے گئے 5افرادمشتبہ مریضوں میں سے 4کی رپورٹ مثبت آئی ہے جبکہ ایک کی رپوٹ کا ابھی انتظار ہے۔ بانڈی پورہ کے یہ چاروں شخص ،

وادی میں ہُو کا عالم

سرینگر// وادی میں بھارت لاک ڈائون کے پہلے روز جنوب و شمال میں ہو کا عالم رہا۔سرینگر سمیت وسطی ، شمالی اور جنوبی کشمیر کے سبھی اضلاع، تحاصیل ہیڈکوارٹروں، قصبوں حتیٰ کہ دیہات تک بھی ہر طرح کی سرگرمیاں معطل رہیں۔اس دوران پولیس نے کہا ہے کہ انہوں نے  وادی میں دفعہ 144کی خلاف ورزی کرنے نیز دفعہ 188کے تحت ملک بھر میں آفات سماوی قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف82کیس در ج کئے ہیں جبکہ بدھ کو بھی پولیس نے امتناعی احکامات کی خلاف ورزی کی پاداش میں 38افراد کو حراست میں لیا جبکہ21گاڑیاں بھی ضبط کیں۔بانڈی پورہ میں پولیس نے ایک درجن گاڑیوں کو ضبط کیا،جبکہ14افراد کو بھی حراست میں بھی لیا۔سمبل میں لاک ڈاون کی خلاف ورزی کرنے والے 20افراد حراست میں لئے گئے جبکہ دو اسکوٹر وںسمیت7گاڑیاں ضبط کی گئیں۔ ارشاد احمد کے مطابق گاندربل میں پولیس نے خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں4دکانداروں کو2علیحدہ علیحدہ

مہا بھارت جنگ 18روز میں ہوئی

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا  ہے کہ ملک کورونا وائرس کے خلاف ایک بڑی جنگ لڑ رہا ہے اور اس سے ہر حال 21دن میں جیت حاصل کرنی ہے نہیں تو اس سے اتنا نقصان ہوگا جس کا اندازہ نہیں لگایا جا سکتا ۔ مودی نے آج اپنے پارلیمانی حلقہ وارانسی کے لوگوں کے ساتھ یہاں ویڈیو کانفرنس کے ذریعے بات چیت کرتے ہوئے یہ بات کہی ۔ انہوں نے کہا کہ ملک کورونا وائرس کے خلاف جنگ لڑ رہا ہے اس میں 21 دن لگنے والے ہیں اور ہماری کوشش ہے کہ اسے 21 دن میں جیت لیا جائے ۔ انہوں نے کہا‘‘ جن مشکلات کا سامنا آج ہم کر رہے ہیں، جو مشکلات آج پیش آ رہی ہیں، اس کی عمر فی الحال 21 دن ہی ہے ، لیکن اگر کورونا وائرس کا بحران ختم نہیں ہوا، اس کا پھیلاؤ نہیں رکا تو کتنا زیادہ نقصان ہو سکتا ہے ، اس کا اندازہ نہیں لگایا جا سکتا ہے ’’ ۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس جیسی وبا سے نمٹنے کا ابھی واحد ط

لاک ڈاؤن پر سختی کیساتھ عمل کرنے کی تلقین

جموں//لیفٹینٹ گورنر گریش چندر مرمو نے جموں کشمیر کے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ 21 روز کے مکمل لاک ڈاؤن پر سختی کے ساتھ عمل کریں تا کہ کورونا وائیرس کے پھیلاؤ کی کڑی کو توڑا جا سکے ۔ اپنے پیغام میں مرمو نے کہا کہ وائیرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کیلئے جموں کشمیر کی انتظامیہ نے سخت اقدامات کئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں بین ریاستی بس سروس بند کی گئی ہے ، مختلف مقامات پر آئیسو لیشن وارڈ قائم کئے گئے ہیں اور باہر سے آنے والے مسافروں کی سکریننگ کیلئے مکمل انتظامات کئے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ’’ وزیر اعظم نے ملک بھر میں 21 روز کے لاک ڈاؤن کیلئے عوام سے تعاون طلب کیا ہے جموں کشمیر کے لوگوں کو چاہیے کہ وہ اس وبائی بیماری پر قابو پانے کیلئے لاک ڈاؤن کی پابندی کریں ‘‘۔  انہوں نے لوگوں سے کہا کہ وہ اپنے گھروں میں رہیں اور احتیاط برتیں ۔انہوںنے کہا کہ تمام

سفری تفاصیل چھپانے والوں کیلئے جیل

سرینگر//لیفٹینٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان، جو کہ کشمیر صوبے میں کورونا وائیرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کیلئے کی جا رہی کوششوں کے انچارج بھی ہیں ، نے تمام ڈپٹی کمشنروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ پیدہ شدہ صورتحال مدِ نظر رکھتے ہوئے جنگی بنیادوں پر کام کریں ۔ انہوں نے ڈپٹی کمشنروں کو ہدایت دی کہ وہ کورونا وائیرس کو پھیلنے سے روکنے کیلئے قریبی تال میل بنائے رکھیں ۔ مشیر موصوف نے یہ ہدایات مختلف اضلاع کی انتظامیہ کی جانب سے حالات کا نمٹارہ کرنے کیلئے کی گئی تیاریوں کا جائیزہ لینے کے دوران دیں ۔ انہوں نے تمام اضلاع کی انتظامیہ کے افسروں سے آئیسو لیشن میں رکھے گئے مشتبہ افراد کی تفصیلات اور ہسپتالوں و ہوم کورنٹائین میں رکھے گئے افراد کے بارے میں جانکاری طلب کی ۔ مشیر نے ضلع ہسپتالوں اور سکریننگ مراکز کے علاوہ لوگوں کو ضروری اشیاء فراہم کرنے کی سرگرمیوں کا بھی جائیزہ لیا ۔ بصیر احمد خان نے اگلے 21

بھارت میں تعداد 562تک پہنچ گئی

نئی دہلی//  انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ کے اعدادوشمار میں کہا گیا ہے کہ گذشتہ تین روز سے ملک بھر میں لاک ڈائون سختی کیساتھ نافذ کرنے کے  بعد کرونا کیسوں میں معمولی کمی آگئی ہے۔ بیان کے مطابق گذشتہ 24گھنٹوں کے دوران 57کیس سامنے آئے جو اس سے قبل 24گھنٹوں کے دوران سامنے آنے والے کیسوںکی تعداد سے کم ہے۔ جو 67 تھی۔ انڈین کونسل نے کہا ہے کہ ابھی اس پر خوش ہونے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ پچھلے 5روز میں بھارت میں کرونا وائرس کیسوں کی تعداد اس سے قبل کے 5روز کے دوران دوگنی ہوگئی ہے۔ انکا کہنا ہے کہ اگر گذشتہ 5روز کی رفتار جاری رہتی تو اس ہفتے کے اختتام پر بھارت میں کرونا کیسوں کی تعداد 1000 سے تجاوز کر جائے گی۔ ادھر بھارت بھر میںکورونا وائرس سے متاثرہ کیسوں کی تعداد 562 ہوگئی ہے۔ نئے کیس جموں کشمیر، تلنگانہ، پنجاب، مہاراشٹرا، کرناٹک، گجرات، راجستھان ، اتر پردیش اور منی پور میں رجسٹر

گذشتہ پانچ روز سے لداخ میں کورونا کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا

سرینگر//یوٹی لداخ میںگذشتہ 5دنوںکے دوران کورو نا وائرس کا کوئی بھی نیا مثبت کیس سامنے نہیں آیا ہے ۔ اس دوران خطے میں کوروناوائرس میں مبتلاء 2مریض صحت یاب ہوگئے ہیں۔ لداخ خطے میں لاک ڈاون پر سختی سے عمل کیا جارہا ہے کیوں کہ لوگوں کوخدشہ ہے کہ وہاں وبائی وائرس کا شکار مزید لوگ موجود ہوسکتے ہیں۔ واضح رہے کہ لداخ میں اب تک کورونا وائرس کے 13 مثبت کیسوں کی تصدیق ہوئی ہے۔لداخ کے کمشنر سیکریٹری رگزن سیمفل نے بدھ کے روز میڈیا کو تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا ’’کورونا وائرس کے مزید تین ٹیسٹ رپورٹ موصول ہوئے ہیں جو تینوں منفی ہیں، اس دوران وائرس سے متاثرہ دو مریض صحت یاب ہوئے ہیں‘‘۔معلوم ہوا ہے کہ خطے میں لاک ڈاون پر سختی سے عمل درآمد ہورہا ہے اورلوگ اپنے گھروں میں ہی رہنے کو ترجیح دے رہے ہیں۔مقامی لوگوں کو خدشہ ہے کہ وہاں کرونا وائرس کا شکار مزید لوگ موجود ہوسکتے ہیںکی

جموں و کشمیرمیں سرکاری دفاتر 14اپریل تک بند

جموں// جموں کشمیر سرکار نے قومی آفات سماوی اتھارٹی اور وزارت داخلہ کی سماجی دوری اختیار کرنے کی گائیڈ لائنوں کے پیش نظر حکم دیا ہے کہ  14اپریل تک تمام سرکاری دفاتر بند رہیں گے۔عمومی انتظامی مھکمہ کی جانب سے جاری کئے گئے احکامات میں کہا گیا ہے کہ  پولیس،ہوم گارڈس، سیول ڈیفنس،فائر اینڈ ایمر جنسی سروسز، آفات سماوی اور جیل خانہ جات کے محکمے کام کرتے رہیں گے۔ اسکے علاوہ لازمی سروسز جیسے  محکمہ ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن ادارے، ضلع انتظامہ اور ٹریجریز،محکمہ بجلی، پانی، میونسپلٹی اور رور ٹرانسپورٹ کارپوریشن بھی کام کرتے رہیں گے۔ نیزبلدیاتی اداروں میں صحت و صفائی اور پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے درکار ملازمین ہی کام کرتے رہیں گے۔سبھی ایڈمنسٹریٹو سیکریٹریز،صوبائی کمشنروں،ضلع ترقیاتی کمشنروں،محکموں کے سربراہان، منیجنگ ڈائریکٹروں وغیرہ کو ہدایات دی گئیں ہیں کہ وہ ماتحت محک

محبوبہ مفتی کو رہا کیا جائے: عمر عبداللہ

سرینگر/ / نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اورسابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے بدھ کو پی ڈی پی صدر اور جموں کشمیر کی ایک اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی سمیت دیگر نظر بندلوگوںکی رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ’’ محبوبہ مفتی کی مسلسل نظربندی مرکزی حکومت کا ظالمانہ اپروچ ہے‘‘۔ عمر عبداللہ کو گذشتہ روز کم و بیش آٹھ ماہ کی اسیری کے بعد رہا کیا گیا۔اپنی رہائی کے دوسرے دن عمر عبداللہ نے سماجی رابطہ گاہ ٹیوٹر پر لکھا’’ موجودہ صورتحال میںمحبوبہ مفتی اور دیگر لوگوںکو بدستور نظر بند رکھنا ظالمانہ اور ناگوار عمل ہے، پہلے تو کسی کو نظربند رکھنے کا کوئی جواز تھا ہی نہیں اور ایک ایسے وقت میں جب ملک بھر میں3ہفتوں کا لاک ڈائون ہے، کسی کو نظربند رکھنا مزید بلا جواز بنتا ہے،مجھے امید ہے کہ وزیر اعظم کا دفتر اور مرکزی وزیر داخلہ انہیں رہا کریں گے‘‘۔محبوبہ اور خود عم

مزید خبرں

قرنطینہ مراکز میں قیام وطعام ، 45کروڑ روپے واگذار سید امجد شاہ  جموں //حکومت نے قرنطینہ مراکز میںلوگوں کے قیام و طعام کیلئے 45کروڑ روپے  واگزار کئے ہیں ۔فائنانشل کمشنر محکمہ خزانہ ڈاکٹر ارون کمار مہتا کی طرف سے جاری ہوئے ایک سرکیولر کے مطابق قرنطینہ میں قیام و طعام پر خرچ کیلئے 45کروڑ روپے واگزار کئے گئے ہیں اور یہ رقم ڈیزاسٹر ریسپانس فنڈ کے تحت جاری کی گئی ہے ۔ اس رقم سے 21دن کے لاک ڈائون کے دوران جموں وکشمیر کے لوگوں کو مدد فراہم ہوگی ۔سرکیولر کے مطابق اس رقم سے مفت راشن فراہم کیاجائے گا اور ساتھ ہی یومیہ مزدوروں اور جھگی جھونپڑی میں رہنے والے افراد بھی اس کے دائرہ میں لائے جاسکتے ہیں ۔محکمہ خزانہ کے مطابق اس سلسلے میں خریدی جانیوالی اشیاء کے بل لاک ڈائون کی وجہ سے جمع نہیں کروائے جاسکتے لہٰذا انہیں مالی سال 2020-21میں پیش کیاجائیگا۔اسی طرح سے حکومت جموں وکشمیر کے 2

تازہ ترین