دوا ملتے ہی ٹرمپ کالہجہ بدلا | کہا مودی ہیں شاندار لیڈر

واشنگٹن// کورونا وائرس کی وجہ سے امریکہ میں ہورہی ہلاکتوں اورمتاثرین کی تعدادمیں مسلسل اضافے سے پریشان صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ہندوستان سے ایک ضروری دوا مانگی تھی ، جسے سپلائی نہ کئے جانے پر انہوں نے جوابی کارروائی کی دھمکی بھی دی تھی۔ تاہم ہندوستان نے اس دوا کو انسانی مفاد میں برآمد کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ بھارت کے اس اقدام کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ کااندازبیان بدل گیااورانہوںنے اپنے تازہ بیان میں وزیر اعظم نریندر مودی کی تعریف کی ۔ اُنہوں نے کہا’’میں نے وزیر اعظم مودی سے پوچھا کہ کیا وہ دوائی دیں گیــ‘‘؟وہ شاندار ہے اُنہوں نے امریکی کی مدد کی ۔بھارت اس دوا کا سب سے بڑا برآمد کنندہExporter ہے۔ تاہم بھارت نے اس دواکی برآمدپرپابندی عائدکردی تھی تاکہ پہلے ملکی مانگ وضرورت کوپوراکیاجائے۔  

ڈبلیو ایچ او کی فنڈنگ پر روک لگانے کی دھمکی | امریکی صدر کی اپنے ہی بیان کی تردید

واشنگٹن// امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بدھ کو وائٹ ہاؤس میں ایک پریس کانفرنس میں عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کی فنڈنگ پر روک لگانے کی دھمکی دینے کے بعد خود اپنے بیان کی تردید کردی۔انہوں نے ڈبلیو ایچ او پر وبا سے نمٹنے میں چین کے جانبداری کرنے کا الزام لگایا۔مسٹر ٹرمپ نے کہا‘‘انہوں نے اسے غلط بتایا، انہوں نے کال مس کر دیا، لہذا اب ہم اس پر بہت باریکی سے نظر رکھ رہے ہیں اور ڈبلیو ایچ او کے اخراجات پر روک لگانے جا رہے ہیں’’۔ان کے بیان کے کچھ دیر بعد مسٹر ٹرمپ نے اپنے ا س بیان کی تردید کردی۔مسٹر ٹرمپ نے اس بات سے انکار کیا کہ وہ کہہ رہے ہیں کہ امریکہ ڈبلیو ایچ او کورقم دینا بند کر دے گا۔انہوں نے کہا‘‘نہیں، میں نے ایسا نہیں کہا، میں نے کہا کہ میں اسے دیکھتا ہوں۔یواین آئی  

عالمی وباء کا قہر جاری | دنیا بھرمیں81695اموات ،1420949 متاثر

بیجنگ// عالمی وبا کورونا وائرس (کوویڈ-19) کا انفیکشن رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اب یہ بیشتر ممالک (205 ممالک اور خطوں) میں پھیل چکا ہے ۔اس انفیکشن کی وجہ سے 81695 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں اور 1420949 افراد متاثر ہوئے ہیں۔ اب تک ، دنیا بھر میں تقریباً تین لاکھ افراد اس وائرس سے ٹھیک ہو چکے ہیں۔اٹلی ، جو کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ ملک ہے ، اس وبا نے سب سے زیادہ 17127 اموات ہوچکی ہیں اور اب تک 135586 افراد اس میں مبتلا ہوچکے ہیں۔ اٹلی میں اس انفیکشن کی وجہ سے دنیا بھر میں سب سے زیادہ اموات ہوئی ہیں۔اس عالمی وبا کے مرکز چین میں اب تک 81802 افراد متاثر ہوئے ہیں اور 3333 افراد فوت ہوگئے ہیں۔ اس وائرس کے بارے میں تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق ، چین میں اموات کی 80 فیصد تعداد 60 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کی ہی ہے ۔دنیا میں سپر پاور سمجھے جانے والے امریکہ میں اس وائرس نے ایک بہت ب

افغانستان میں37طالبان جنگجو جاں بحق

کابل//عالمی وبا کورونا وائرس کے قہر کو دیکھتے ہوئے افغانستان میں جنگجو تنظیم طالبان سے جنگ بندی کی اپیل کے باوجود فوج کی اس گروپ کے ساتھ تصادم جاری ہے اور گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران مختلف واقعات میں کم از کم 37 طالبانی ہلاک اور 31 دیگر زخمی ہوگئے ۔ اس دوران فوج کے دو جوان اور تین شہری بھی مارے گئے ہیں۔فوج کی جانب سے بدھ کے روز جاری بیان کے مطابق غور صوبے کے شہراک ضلع میں منگل کے روز طالبانیوں نے قومی فوج کے لاجسٹک قابلے پر حملہ کردیا۔ فوج کی جانب سے کئے گئے جوابی ہوائی حملے میں18طالبانی مارے گئے ۔پڑوسی فرح صوبے کے پشت روڈ ضلع میں طالبانیوں کو ہدف بناکر کئے گئے۔  

سعودی عرب میں رمضان اور عید الفطر کے دوران بھی کرفیو جاری رہنے کا امکان

ریاض//سعودی وزارت صحت کے ترجمان نے گزشتہ روز ایک نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کے دوران کہا تھا کہ مملکت میں کورونا وائرس کی وبا پر قابو پانے میں کئی ماہ لگ سکتے ہیں۔ اس بیان کے بعد اْمت مْسلمہ میں یہ تشویش پائی جا رہی ہے کہ کیا اس بار عازمین حج بیت اللہ کی سعادت سے محروم تو نہیں رہ جائیں گے۔ سعودی وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبد العالی نے یہ امکان ظاہر کیا ہے کہ مملکت میں رمضان اور عید الفطر کے دوران بھی کرفیو جاری رہ سکتاہے۔ ڈاکٹر محمد العبد العالی نے کہا ہے کہ متعدد شہروں میں 24 گھنٹے کرفیو کا فیصلہ انتہائی اہم اور مفید رہے گا۔ اس سے رہائشیوں کو وبا سے تحفظ فراہم کرانا مقصود ہے۔ مملکت میں کورونا کے مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ احتیاطی تدابیر پر معاشرے کا 50 فیصد حصہ عمل کر رہا ہے جبکہ باقی آدھا حصہ پہلے جیسی سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔ صبح کے اوقات جب کرفیو

کرونا وائرس کاپھیلائو جاری | دنیا میں 74136 اموات، 1345077 متاثر

بیجنگ / جنیوا //عالمی وبا کوراناوائرس (کووڈ -19) کے پھیلاو تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اب دنیا کے زیادہ تر ممالک (205 ممالک اور علاقوں) میں پھیل چکے اس انفیکشن کی وجہ سے اب تک 74136 لوگوں کی موت ہو گئی ہے اور 1345077 لوگ اس سے متاثر ہوئے ہیں۔ دنیا بھر میں اب تک 2.76 لاکھ لوگ اس وائرس سے ٹھیک بھی ہوئے ہیں۔کوروناوائرس سے سب سے زیادہ متاثر یوروپی ملک اٹلی میں اس وبا کی وجہ سے سب سے زیادہ 16،523 لوگوں کی موت ہوئی ہے اور اب تک 132547 لوگ اس سے متاثرہ ہوئے ہیں۔ اس انفیکشن سے دنیا بھر میں سب سے زیادہ لوگوں کی موت اٹلی میں ہی ہوئی ہے۔اس عالمی وبا کے مرکز چین میں اب تک 81،741 لوگ اس سے متاثرہ ہوئے ہیں اور 3،331 اموات ہوئی ہیں۔ اس وائرس کے تعلق سے تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں ہوئی اموات کے 80 فیصد معاملے 60 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے تھے۔دنیا کے سپر پاور مانے جانے والے امریکہ میں

ماسک بچائو کا جادوئی حل نہیں

جنیوا//عالمی ادارہ صحت نے متنبہ کیا ہے کہ کرونا وائرس کے وباء پر قابو پانے کے لیے صرف ماسک کا استعمال ہی کافی نہیں ہے۔ ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل ٹائڈروس اڈھانم گیبری سوس نے ایک ویڈیو کانفرنس میں کہا کہ ماسک کو صرف حفاظتی اقدامات کے پیکیج شامل ایک جزو کے طوپراستعمال کیا جانا چاہیے۔انہوں نے کہا کی ماسک کا استعمال اسی وقت مناسب ہے جب ہاتھ دھونے یا سماجی فاصلہ ممکن نہ ہو۔گیبری سوس کا کہنا تھا کہ کرونا کا شکار ہونے والے ممالک کو عوام میں ماسک استعمال کرنے کے معاملے پر توجہ دینی چاہیئے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ طبی ماسک کا وسیع پیمانے پر استعمال صحت کارکنوں کے لیے حفاظتی سامان کی کمی کو بڑھا سکتا ہے۔  

جاپان کی7 ریاستوں میں ایمرجنسی نافذ | نیوزی لینڈ میں ایمرجنسی کی مدت بڑھائی گئی

ٹوکیو//عالمی وبا کورونا وائرس (کووڈ۔19)کے مسلسل بڑھتے قہر کے بیچ جاپان کے وزیراعظم شنزو آبے نے ملک کی سات ریاستوں میں ایک ماہ کیلیے ایمرجنسی نافذ کرنے کا اعلان کیاہے۔مسٹرآبے نے منگل کے روز اس سلسلہ میں ایک بیان جاری کرکے کہاکہ ٹوکیو اور اوساکا کے علاوہ کنگاوا، سوتاما ، چیبا ،ہویوگو اور فوکو اوکا میں ایک ماہ تک ایمرجنسی نافذ رہے گی۔واضح رہے کہ جاپان میں کورونا وائرس کی وجہ سے اب تک 108لوگوں کی موت ہوچکی ہے جبکہ اس سے متاثر مریضوں کی تعداد 4845ہے۔ دریں اثناء عالمی وبا کورونا وائرس کے مسلسل بڑھتے انفیکشن کے درمیان نیوزی لینڈ میں منگل کو قومی ایمرجنسی کو ایک ہفتے کیلئے بڑھانے کا اعلان کیاگیا۔نیوزی لینڈ کے شہری سلامتی کے وزیر پینی ہینارے نے منگل کو ایک بیان جاری کرکے کہا،’’شہری سلامتی اور ایمرجنسی کے انتطامیہ محکمے کے ڈائریکٹر کی صلاح پر وزیراعظم سے بات چیت کرنے کے بعد میں نے

جانسن کے آئی سی یو میں داخل ہونے سے افسردہ ہوں:ٹرمپ

واشنگٹن//امریکہ کے صدر ڈونلڈٹرمپ نے منگل کو برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کے آئی سی یو میں داخل ہونے کی خبر سن کے گہرے رنج کا اظہارکیا ہے ،اور ان کی جلد صحت یابی کے لئے دعا کی۔مسٹر ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس ٹاسک فورس کانفرنس کے موقع پر کہا ، "میں اپنے سب سے اچھے دوست اور امریکہ کے دوست ، بورس جانسن کو نیک خواہشات دیتا ہوں۔ میں ان کے آئی سی یو میں داخل ہو نے کی خبر سن کے غمزدہ ہوں۔’’انہوں نے کہا کہ تمام امریکی مسٹر جانسن کی جلد صحت یابی کے لئے دعا گو ہیں۔ انہوں نے کہا ‘‘جانسن بہت مضبوط ، پرعزم اورآسانی سے ہار ماننے والے انسان نہیں ہیں’’۔خیال رہے برطانیہ کے وزیر اعظم جانسن کی حالت سنگین ہو نے کی وجہ سے انہیں لندن کے سینٹ تھامس اسپتال کے آئی سی یو میں داخل کرایا گیا ہے ۔  

کورونا بحران مزید سنگین | دنیا میں 64774 افراد ہلاک ، 12.03 لاکھ متاثر

بیجنگ / جینیوا / نئی دہلی/ عالمی وبا ء کورونا وائرس رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور ابھی تک اس کے انفیکشن کی وجہ سے 64774 افرادکی موت ہوچکی ہے اوراور 12.03 لاکھ افراد اس سے متاثر ہوچکے ہیں ۔ ساتھ ہی اب تک اس وائرس سے متاثر 2.47 لاکھ افراد ٹھیک ہوچکے ہیں۔ یہ وائرس بیشتر ممالک اور خطوں میں پھیل چکاہے ۔ ہندوستان میں بھی کورونا انفیکشن تیزی سے پھیل رہا ہے اور اتوار کی صبح وزارت صحت کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، ملک کی مختلف ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں اب تک 3374 افراد متاثر ہوئے ہیں ، جبکہ 77 افراد کی موت ہوگئی ہے ۔ اس وائرس سے متاثر 267 افراد اب تک ٹھیک بھی ہوچکے ہیں۔اٹلی ، جو کورونا وائرس سے سب سے زیادہ سنگین طور پر متاثرہ ملک ہے ، میں اس وائرس سے 15362 اموات ہوئی ہیں ، جب کہ 124632 افراد اس میں مبتلا ہوگئے ہیں۔ اس عالمی وبا ء کے مرکز چین میں اب تک 82574 افراد اس سے م

کوئی ملک لاک ڈاؤن ہٹانے میں جلدی نہ کرے:عالمی ادارہ ٔ صحت

سرینگر//عالمی ادارۂ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے دنیا کے تمام ممالک کو خبردار کیا ہے کہ وہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے جاری لاک ڈاؤن کو ہٹانے میں جلدی نہ کرے۔ عالمی ادارۂ صحت کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈروس ادھانوم گھیبریوسس کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن جلد ہٹانے سے طویل عرصے تک منفی معاشی اثرات کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے اور یہ وائرس دوبارہ سر اٹھاسکتا ہے۔ڈاکٹر ٹیڈروس کا کہنا ہے ’’ ہمیں معلوم ہے کہ لاک ڈاؤن کے سماجی اور معاشی اثرات نہایت سخت ہیں تاہم ہمارے پاس صورتحال کو بہتر بنانے کے لیے یہی بہترین راستہ ہے کہ ہم خود وائرس پر حملہ آور ہوں۔‘‘ان کا مزید کہنا ہے کہ تمام ممالک وبا ء پر کنٹرول کے لیے بنیادی ہدایات پر عمل کریں۔دوسری جانب عالمی مالیاتی فنڈ(آئی ایم ایف ) کا بھی کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا کی کم زور معیشتیں مزید بحران کا شکار ہوسکتی ہیں۔آئی ایم ای

مصر میں متاثرین کی تعداد 1000 سے متجاوز

قاہرہ// مصر میں کورونا وائرس کے 1000 سے زیادہ کیس کی تصدیق ہوئی ہے اور اس سے یہاں 85 افراد کی موت ہو چکی ہے ۔ یہ اطلاع وزارت صحت نے دی۔ وزارت کے ترجمان خالد مجاہد نے بتایا کہ ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 86 نئے کیس سامنے آئے ہیں۔  

ٹرمپ نے اپنے شہریوں کوخبردار کیا | ’ کورونا ہلاکتوں کی تعداد بڑھنے کا خدشہ‘

واشنگٹن//امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے ملک کے شہریوں کو وارننگ دی ہے کہ آنے والی ہفتے میں کورونا وائرس کی وجہ سے مرنے والوں کی تعداد میں بڑا اضافہ ہوسکتا ہے ۔ ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں اپنے خطاب کے دوران کہا کہ آنے والے دنوں میں لوگوں کی اوراموات ہوں گی۔انہوں نے وبا ء سے سب سے زیادہ متاثر ریاستوں کو وباسے نمٹنے میں تعاون کرنے کے لئے طبی سپلائی اور فوجی اہلکارمہیا کرانے کا عزم دہرایا۔جان ہاپکنس یونیورسٹی کے تازہ ترین اعدادو شمار کے مطابق امریکہ میں کورونا کے متاثرین کی تعداد دنیا بھر میں سب سے زیادہ 3,11,301ہوگئی ہے ۔    

دنیا سنگین صورتحال سے دوچار | کرونا سے 59136 ہلاکتیں، 1101674 متاثر

بیجنگ/جنیوا//پوری دنیا کے زیادہ تر (اب تک 185)ممالک میں پھیل چکے کروناوائرس (کووڈ۔19) کی وبا تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اس خطرناک وائرس سے پوری دنیا میں اب تک 59136 لوگوں کی موت ہوچکی ہے اور تقریبا 1101674 لوگ اس سے متاثر ہیں اوراب تک 226669 لوگ ٹھیک ہوچکے ہیں۔وائرس کے سلسلے میں تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں ہوئی موت کے 80 فیصد معاملے 60 برس سے زیادہ عمر کے لوگوں کے تھے۔دنیا کاسپرپاور امریکہ میں یہ وبا تباہ کن شکل لے چکی ہے۔ یہاں پر اب تک 277953 لوگ اس سے متاثر ہوچکے ہیں۔ اس کے بعد کرونا کی سب سے سنگین صورت حال اٹلی اور اسپین کی ہے۔عالمی وبا کرونا وائرس سے بری طرح متاثر اٹلی میں اس انفیکشن سے مرنے والوں کی تعداد 14 ہزار کے پار پہنچ چکی ہے۔ یہاں پر اس جان لیوا وبا کی وجہ سے اب تک 14681 لوگوں کی موت ہوچکی ہے جبکہ 119827 لوگ اب تک اس سے متاثر ہیں۔اسپین میں کرونا وائرس سے مرن

۔14فیصد نوجوان ٹھیک ہونے کے بعد دوبارہ متاثر ہوئے:تحقیق

بیجنگ// ماہرین کی ایک اسٹڈی میں پتہ چلا ہے کہ کورونا وائرس سے متاثر14.5 فیصد نوجوان اسپتال سے چھٹی ملنے کے بعد دوبارہ اس سے متاثر ہو ئے۔کورونا وائرس کی یہ تحقیق چین اورامریکہ کے سائنسدانوں نے کی ہے۔ تحقیق کے مطابق 262 کیسزمیں سے 38 کیس ایسے پائے گئے، جب نوجوان ٹھیک ہونے کے دو ہفتے بعد دوبارہ اس وبا میں مبتلا ہوئے.اس کا مطالعہ جنوبی چین کے صوبہ گوانڈونگ سے ہیلتھ کے حکام نے فروری کے آخر میں کیاتھا،جس میں تقریبا14فیصد معاملات میں یہ پایا گیا کہ نوجوان اس جان لیواوائرس سے ٹھیک ہونے کے دو ہفتے کے اندردوبارہ اس کی زدمیں آ گئے۔ماہرین کے مطابق جو38 افراد دوبارہ اس وائرس سے متاثر ہوئے ان میں صرف ایک شخص کی عمر60 سال سے زیادہ، جبکہ سات کی عمر14 سال سے کم تھی۔ ساتھ ہی ماہرین کوپتہ چلا کہ جو38 لوگ دوبارہ متاثر ہوئے ان میں سے چند لوگوں نے ہلکی کھانسی اورسینے کی جکڑن کی شکایت کی جبکہ کسی کو بھی بخ

ین میں 21 نئے کیسز، 4 اموات

بیجنگ//چین میں کورونا وائرس کے 21 نئے کیس اور 4 نئی اموات رپورٹ ہوئی ہیں۔چین کے نیشنل ہیلتھ کمیشن کے مطابق نئے کیسز میں سے متعدد ایسے کیسز ہیں جن کی تصدیق بیرون ملک سے آنے والوں میں ہوئی ہے۔کمیشن کے مطابق ملک میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 81 ہزار 620 ہوگئی ہے جس میں سے ساڑھے 76 ہزار افراد صحت یاب بھی ہو گئے ہیں، جبکہ چین میں کورونا سے 3322 اموات ہوئی ہیں۔ادھرافریقہ میں اس وائرس کی زد میں آنے سے اب تک 284 افراد ہلاک جبکہ تقریبا 7028 لوگ متاثر پائے گئے ہیں۔افریقہ سینٹر فار ڈیزیز کنٹرول اینڈ پریونشن (افریقہ سی ڈی سی) نے بتایا کہ کورونا وائرس اب تک تقریبا 50 افریقی ممالک میں پھیل چکا ہے۔سی ڈی سی نے بتایا کہ جنوبی افریقہ میں کورونا وائرس کے 1462 کیسز، الجیریا میں 847 اور مصر میں 779 کیس درج کئے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ براعظم میں اب تک 779 مریض ٹھیک ہو چکے ہیں۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دور

انتخابات مقررہ وقت پر ہی ہوں گے : ٹرمپ

واشنگٹن// عالمی وبا کورونا وائرس کوووڈ 19' کی وجہ سے پوری دنیا میں مچی اتھل پتھل کے درمیان امریکہ میں اس سال ہونے والے صدارتی انتخابات کی بابت صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ انتخابات اپنے مقررہ وقت 3 نومبر کو ہی ہوں گے۔مسٹر ٹرمپ نے کورونا وائرس کی وجہ سے انتخابات ملتوی کئے جانے کے سوال پر کہا’’عام انتخابات اس سال تین نومبر کو ہی ہوں گے‘‘۔  

کرونا کا قہر : دنیا میں 53179کی موت،متاثرین کی تعداد 1017693ہوگئی

 بیجنگ / جنیوا // دنیا کے بیشتر ممالک میں وبا بن کر قہر برپا نے والے کورونا وائرس (کووڈ 19) کے تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اس وجہ سے دنیا بھر میں اب تک 53179 لوگوں کی موت ہو چکی ہے ، اور 1017693 لوگ اس متاثرہ ہوئے ہیں۔دنیا بھر میں اب تک اس وبا سے 2012072 لوگ ٹھیک ہوئے ہیں۔ یہ اعداد و شمار امریکہ کے جانک ہاپنکس یونیورسٹی کے مطابق ہیں۔دنیا کے سب سے طاقتور ملک امریکہ میں یہ بیماری شدید طور پر پھیل چکی ہے ۔ یہاں پر اب تک 245573 لوگ اس متاثرہ ہوئے ہیں اور اس کی وجہ سے 6088 اموات ہو چکی ہے ۔ وہیں اٹلی بھی اس وبا سے بری طرح متاثر ہے ۔ یہاں پر اس قاتل وائرس کی وجہ سے 13915 اموات ہو چکی ہیں اور 115242 لوگ اس متاثرہ ہوئے ہیں۔اس عالمی وباکے مرکز چین میں اب تک 82،464 لوگ اس متاثرہ ہوئے ہیں اور اس کی وجہ سے 32302 لوگوں کی جان گئی ہے ۔ اس وائرس کو لے کر تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین می

امریکہ میں مرنے والوں کی تعداد 6ہزار سے متجاوز

واشنگٹن//امریکہ میں کورونا وائرس (کووڈ-19)وبا سے اب تک 6088اموات ہو چکی ہیں۔اور 245573 افراد متاثر ہیں۔جمعہ کے روز جانس ہاپکنز یونیورسٹی کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، نیویارک میں اب تک انفیکشن کی وجہ سے اموات کی تعداد سب سے زیادہ ہے ۔اچھی بات یہ ہے کہ اب تک 9228صحت یاب ہوئے ہیں۔امریکہ میں حالیہ دنوں کورونا متاثرین کی تعداد دنیا میں سب سے زیادہ ہے ۔جانس ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق ، اب تک دنیا بھر میں 10 لاکھ سے زائد افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں جبکہ اس وبا سے 53،000 سے زیادہ اپنی جانیں گنوا چکے ہیں۔وائٹ ہاؤس کے ماہرین کا کہنا ہے کہ تقریباً ایک لاکھ سے 2 لاکھ 40 ہزار امریکی اس مرض سے ہلاک ہوسکتے ہیں۔اسی صورتحال کو دیکھتے ہوئے ڈیزاسٹر رسپانس ایجنسی فیما نے امریکی فوج سے لاشوں کو رکھنے کیلئے ایک لاکھ بیگز منگوالیے ہیں۔مزید برآں امریکی میں اس صورتحال کے بعد85 فیصد امریکی کسی نا

ٹرمپ کی دوبارہ جانچ،رپورٹ منفی آئی

واشنگٹن // امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ایک مرتبہ پھر کورونا وائرس ‘ کووڈ 19 ’ کی جانچ کی گئی جس میں وہ کورونا وائرس سے متاثر نہیں پائے گئے ۔ وائٹ ہاؤس کی ترجمان اسٹیفنی گریشم نے ایک بیان جاری کر کے یہ اطلاع دی ۔ وائٹ ہاؤس کے ڈاکٹر شیان کونلے نے روزانہ وائٹ ہاؤس کورونا وائرس ٹاسک فورس کی بریفنگ سے ٹھیک پہلے ایک میمو جاری کر کے کہا‘‘ کل صبح صدر ٹرمپ کی دوبارہ کورونا وائرس کے تعلق سے جا نچ کی گئی اور وہ صحت مند ہیں اور ان میں کورونا وائرس سے متعلق کوئی علامات نہیں پائی گئی ہیں’’ ۔ ٹرمپ کے جمعرات کے روز کورونا وائرس بریفنگ میں سامنے آنے سے پہلے ہی وہاں موجود صحافیوں کو میمو دے دیا گیا تھا جس میں کہا گیا کہ مسٹر ٹرمپ کی دوبارہ جانچ کی گئی تھی اور 15 منٹ بعد جانچ کی رپورٹ ان کے ہاتھ میں تھی ۔ میمو میں کہا گیا کہ مسٹر ٹرمپ نے جانچ کرائی جس کی رپورٹ صرف 15 م

تازہ ترین