تازہ ترین

کنڈی کپوارہ میں جھڑپ کے دوران فوجی کمانڈو ہلاک

 ایک مضروب، قصبے میں صورتحال انتہائی کشیدہ، پتھرائو اور شلنگ   کپوارہ// ترہگام میں مظاہرین پر فورسز کی راست فائرنگ سے ایک20سالہ طالب علم جاں بحق جبکہ ایک شدید زخمی ہوا۔ ترہگام میں صورتحال انتہائی کشیدہ ہے اور ہزاروں کی تعداد میں لوگ قصبے میں پہنچ گئے ہیں۔ ادھرسر حدی ضلع کپوارہ کے سادھو گنگا کنڈی جنگلات میں ایک فوجی کمانڈو ہلاک اور ایک زخمی ہوگیا ۔ ترہگام مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ نماز مغرب کے بعد علاقے سے فوج کی کانوائے گذر رہی تھی اور انکی حفاظت کیلئے پہلے ہی قصبے کی گلی کوچوں میں فورسز اہلکار تعینات کئے گئے تھے۔لوگوں کا کہنا ہے کہ ایک گلی سے کچھ نوجوانوں نے ڈیوٹی دے رہے فوجی اہلکاروں پر پتھر پھینکے، جس کے دوران ہی کانوائے کا گذر ہوا اور انہوں نے ہوائی فائرنگ کی اور نکل گئے۔اس دوران فائرنگ سے افرا تفری پھیل گئی اور ڈیوٹی دے رہے فوجی اہلکاروں نے پ

میمندر شوپیان میں قیامت خیز واقعہ

 شوپیان//میمندر شوپیان میں بدھ کو قیامت صغریٰ بپا ہوئی ،جب ایک بارودی گولہ پھٹنے سے 8سالہ کمسن جاں بحق اورکمسن بھائی بہن سمیت4دیگر شدید زخمی ہوئے ۔یہ افسوسناک واقعہ کمبدلن شوپیان کی معرکہ آرائی کے مقام سے کچھ دُوری پر پیش آیا ۔میمندر شوپیان میں بدھ کو  بچے عبدالغنی کے صحن میں کھیل رہے تھے جس کے بعد اچانک دھماکہ ہواجسکی آہنی ریزوں کی زد میں آکر5کمسن بچے شدید زخمی ہوئے ۔ پورے علاقے میں افرا تفری پھیل گئی اور لوگوں کا ہجوم جائے وقوع پر پہنچ گیا۔ بچوں کو خون میں لت پت دیکھ کر لوگوں کی چیخیں نکل گئیں اور انہوں نے زخمی بچوں کو ضلع اسپتال شوپیان پہنچا یا ،جہاں 8سالہ سالک اقبال ولد محمد اقبال شیخ ساکن شیخ  زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ بیٹھا ۔دیگر چار زخمی بچوں کو بہتر علاج ومعالجہ کی خا طر سرینگر منتقل کیا گیا ۔طاہر خورشید اوررضیہ خورشید پسران خورشید احمد ،ارسلان ولد محمد اسل

وادی میں شہری ہلاکتوں کیخلاف ہڑتال

 سرینگر//مشترکہ مزاحمتی قیادت کی طرف سے شہری ہلاکتوں کے خلاف دی گئی ہڑتال کے پیش نظر وادی میں مکمل بند رہا۔ہڑتال سے سرینگر کے علاوہ وادی کے دیگر اضلاع اور تحاصیل صدر مقامات میں تمام طرح کی دکانیں ،کاروباری ادارے،بازار،بینک،تعلیمی ادارے او رنیم سرکاری دفاتر بند رہے جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ بھی متاثر رہا۔ تجا رتی مرکز اور شہر کے دیگر سیول لائنز علاقوں میں اس صورتحا ل کا کافی اثر دیکھنے کو ملا۔ پائین شہر میںہوکا عالم چھایا رہا ۔جنوبی کشمیر میں بھی مکمل ہڑتال سے عام زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی۔ نامہ نگار خالد جاوید کے مطابق کولگام میں مثالی ہڑتال ہوئی،جس کے دوران بازاروں میں الو بولتے نظر آئے،جبکہ دکان اور تجارتی کمپلیکس مقفل رہے۔دمحال ہانجی پورہ،یاری پورہ،دیوسر،قاضی گنڈ،فرصل،پہلو،کھڈونی،ریڈونی اور کیموہ سمیت دیگر علاقوں میں سیول کرفیو جیسا سماں تھا،اور نجی گاڑیاں بھی سڑکوں سے دور تھیں۔اسلام

تیسری ایس اے سی میٹنگ منعقد

 سرینگر// گورنر این این ووہرا کی صدارت میں ریاستی انتظامی کونسل کی تیسری میٹنگ منعقد ہوئی۔گورنر کے مشیر بی بی ویاس،کے وجے کمار اور خورشید احمد گنائی کے علاوہ چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم بھی میٹنگ میں موجود تھے۔ریاستی انتظامی کونسل نے اس کے سامنے انتظامی محکموں کی طرف سے غور کرنے اور منظوری کے لئے پیش کئے گئے مختلف منصوبوں پرتبادلہ خیال کیا۔  شہری بلدیاتی اداروں کے انتخابات کی ہدایت  ریاستی انتظامی کونسل نے ریاست میں شہری بلدیاتی اداروں کے انتخابات منعقد کرانے کا عمل شروع کیا ہے۔ایس اے سی نے مکانات و شہری ترقی محکمہ کو ہدایت دی ہے کہ وہ میونسپل اداروں( میونسپل کارپوریشنوں/ میونسپل کونسلوں/ میونسپل کمیٹیوں) کے انتخابات منعقد کرانے کا عمل چیف الیکٹورل افسر جموں وکشمیر کی مشاورت کے بعد شروع کرے۔  چھوٹے و درمیانہ درجے کے کارخانے  مستثنیٰ&nb

دو دہائیوں کی لال فیتہ شاہی سے آزادی

 سرینگر//قریب دو دہائیوں تک لال فیتہ شاہی کی زنجیروں میں جکڑی پے اناملی فائل کو بالآخر گورنر نریندر ناتھ ووہر ا نے بیک جنبش قلم چھڑا کر کلرکوں اور دیگر ملازمین کی دیرینہ مانگیں پوری کرلیں۔ قابل ذکر امر یہ ہے کہ 2007اور 2012میں حکومت نے ایسے ملازمین کے مطالبا ت کو ،جنہیں تنخواہوں میں تفاو ت کی شکایت تھی ، کے لئے کھانڈے کمیٹی اور بعد ازاں ویاس کمیٹی تشکیل دے کر ان کی مانگوں کا جائزہ لینے کے لئے کہا تھا ۔اس دوران مختلف محکمہ جات میں تعینات کلرکوں نے احتجاج بھی کیا اور ہڑتال بھی، تاہم بار بار کی ہڑتالوں اور احتجاجوں کے باوجود بھی ان کی مانگوں کو پورا نہیں کیا گیا۔ اس دوران ملازمین کے لئے دو پے کمیشن بھی لا گو ہوئے تاہم ان پے کمشنوں میں بھی کلرکوں کے مطالبات کو درخور اعتنا نہیں سمجھا گیا ۔ذرائع نے کہا کہ جب ریاست میں ساتویں تنخواہ کمیشن کا نفاذ بھی عمل میں لایا گیا تو اس وقت بھی کلر ک

ریاستی گورنر شہریوں کی ہلاکتیں روکے:عمر

 سرینگر // ریاست کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبدللہ نے مسلح تصادموں کے دوران عام شہریوں کی ہلاکت کو ٹالنے کی اپیل کرتے ہوئے ریاستی گورنر این این ووہراسے کہا ہے کہ وہ وادی بالخصوص جنوبی کشمیر میں عام شہریوں کی ہلاکتیں روکنے کیلئے نئے سٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجر (ایس او پی) وضع کریں۔بدھ کو سرینگر میں اپنی دادی بیگم اکبر جہاں کی 18ویں برسی کے سلسلے میں نسیم باغ سرینگر میں منعقدہ ایک تقریب پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے عمر نے کہا کہ لوگوں کو امید تھی کہ گورنر راج کے نفاذ کے بعد حالات میں آہستہ آہستہ بہتری آنی شروع ہو جائے گی لیکن ایسا کچھ نہیں ہوا، نہ ہی ہمیں وہ بہتری نظر آرہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ وادی خاص کر جنوبی کشمیر میں مسلح تصادم آرائیوں میں عام شہری مارے جا رہے ہیں اور اس پر جب تک روک نہیں لگائی جا تی تب تک یہ کہنا اور اُمید کرنا کہ حالات میں بہتری آئی ہے،غلط ہوگا۔ ۔عمر عبداللہ