تازہ ترین

راجستھان کے قرنطینہ کیمپ میں سہولیات کے فقدان کا الزام

26 مارچ 2020 (00 : 12 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر//کورونا وائرس کی وباء کی روک تھام کو یقینی بنانے کے لیے اگرچہ انتظامیہ کی جانب سے جنگی نوعیت کے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں اور ملک میں قرنطینہ کیمپوں میں مقیم کشمیریوں کو رہائشی ،طبی ،غذائی سہولیات اور معاونت و تحفظ فراہم کرنے کی یقین دہانیاں کی جارہی ہیں تاہم سعودی عرب سمیت دیگر ممالک سے واپس لوٹنے والے درجنوں زائرین ،کاروبار پیشہ افراد اور طالب علموں کو راجستھان قرنطینہ کیمپ میں مشکلات درپیش ہونے کی خبریں موصول ہوئی ہیں ۔ یو پی آئی کو بشیر احمد نامی بمنہ کے ایک شہری نے بتایا کہ ان کی اہلیہ عمرہ سے واپس لوٹنے کے بعد راجستھان میں قرنطینہ کردی گئی ہے۔ انہوں نے اہلیہ کا حوالہ دے کر کہا کہ مذکورہ  کیمپ میں محدود طبی سہولیات کی وجہ سے وہ ذہنی کوفت کا شکار ہوگئے ہیں۔بشیر کے مطابق کیمپ میں غذائی، طبی اشیا اور وسائل کا فقدان ہے جس کی وجہ سے کیمپ میں مقیم افرادکو شدید پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ اپنے عزیزوں کی صحت و سلامتی کے حوالے سے انتہائی فکر مند ہے کیونکہ کیمپ میں مقیم افراد کی اچھی طرح سے طبی نگہداشت نہیں کی جارہی ہے اور نہ پہلے سے ہی مختلف امراض میں مبتلا افراد کو زندگی بخش ادویات فراہم کئے جارہے ہیں۔انہوں نے جموں و کشمیر انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ مداخلت کرکے راجستھان کیمپ میں مقیم کشمیریوں کو درپیش مسائل و مشکلات کا ازالہ کرنے کے لیے ہنگامی اقدامات کریں۔