کورونا کو شکست فاش دینے کے لیے فٹ بال کی خاص تکنیک کا استعمال:عالمی صحت ادارہ

25 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

لندن؍کورونا وائرس یعنی کووڈ-19 پوری دنیا میں بہت تیزی کے ساتھ پھیل رہی ہے اور اس بات کا اعتراف ڈبلیو ایچ او (عالمی صحت ادارہ) نے بھی کیا ہے۔ لیکن ساتھ ہی ڈبلیو ایچ او نے کہا ہے کہ کووڈ-19 کی اس تیز رفتاری کو روکنا ممکن ہے۔ اس کے لیے ادارہ کے سربراہ ٹیڈروس گیبریاسس نے فٹ بال کی ایک خاص تکنیک کا سہارا لیے جانے کی طرف اشارہ کیا ہے اور کہا ہے کہ اس سے ہم کورونا وائرس کو شکست فاش دے سکتے ہیں۔ٹیڈروس نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ "پہلے کیس سے ایک لاکھ تک پہنچنے میں 67 دن لگے، پھر دوسرے ایک لاکھ کیس تک پہنچنے میں مزید 11 دن لگے، لیکن پھر تیسرے ایک لاکھ کیس تک پہنچنے میں صرف چار دن لگے۔ اس سے ظاہر ہے کہ معاملہ تیزی کے ساتھ پھیلا ہے۔ لیکن ہم مجبور نہیں ہیں۔ ہم اس وبا پر فتح حاصل کر سکتے ہیں۔" اس کے بعد ٹیڈروس نے کورونا کے خلاف لڑائی کو فٹ بال میچ سے جوڑا اور اس مہم کو نام دیا 'پاس دی میسج ٹو کک آؤٹ کورونا وائرس' یعنی کورونا وائرس کو شکست دینے کے لیے پیغام پھیلائیں۔اس مہم کے تحت ڈبلیو ایچ او اور فیفا نے عالمی شہرت یافتہ فٹ بالروں کا استعمال کیا ہے۔ ان فٹ بالروں کی قیادت میں کورونا وائرس کے خلاف ایک نئی بیداری مہم شروع ہوئی ہے اور ایک ویڈیو تیار کیا گیا ہے۔ اس ویڈیو کے ذریعہ دنیا بھر کے لوگوں سے بیماری کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے پانچ اہم مراحل پر عمل کرنے کی گزارش کی گئی ہے۔ یہ مراحل ہیں... ہاتھ دھونا، کھانسنے سے متعلق اخلاقیات، چہرے کو چھونے سے بچنا، جسمانی دوری اور اگر بیمار محسوس کر رہے ہیں تو گھر میں رہنا۔ اس ویڈیو کو 13 زبانوں میں تیار کیا گیا ہے جس میں 28 کھلاڑی شامل ہیں۔ ان کھلاڑیوں میں سابق ہندوستانی کپتان چھیتری، ارجنٹائنا کے سپر اسٹار لیونل میسی کے علاوہ فلپ لاہم، ایکر کیسیلاس اور کالسے پیول جیسے عالمی کپ فاتح کھلاڑیوں کے نام بھی شامل ہیں۔ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس نے سوئٹزرلینڈ کے جنیوا میں ڈبلیو ایچ او ہیڈکوارٹر سے اس مہم کی شروعات کرتے ہوئے کہا کہ "فیفا اور اس کے سربراہ جیانّی انفینٹنو شروع سے ہی اس وبا کے خلاف پیغام عام کرنے میں سرگرم رہے ہیں اور اسی کے تحت یہ کوشش بھی کی گئی ہے۔" ساتھ ہی کہا کہ "فٹ بال کو صرف ڈیفنڈ کر کے نہیں جیتا جا سکتا ہے بلکہ اٹیک بھی کرنا ہوگا۔" انفینٹنو نے اس موقع پر کہا کہ "ہمیں کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے ٹیم ورک کی ضرورت ہے۔ فیفا نے ڈبلیو ایچ او کے ساتھ مل کر یہ کام کیا ہے کیونکہ صحت سب سے پہلے ہے۔ میں دنیا بھر کے فٹ بال طبقہ سے گزارش کرتا ہوں کہ اس مہم کو آگے بڑھانے اور پیغام کو مشتہر کرنے میں ہمارا تعاون کریں۔"

تازہ ترین