تازہ ترین

جموں و کشمیر بینک نے حکمت عملی تیار کی

عملے اور گاہکوں کی حفاظت کیلئے ڈجیٹل بینکنگ کا استعمال اہم قرار: چیئرمین

24 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر//عالمی سطح پر کورونا وائس کے خطرات پر قابو پانے کے مشن کی تعمیل کرتے ہوئے جموں و کشمیر بینک نے اپنی حکمت عملی مر تب کی ہے تاکہ اسکے ملازمین، گاہکوں اور عوام الناس کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکے۔ گاہکوں کو یقین دہانی کراتے ہوئے چیئرمین و منیجنگ ڈائریکٹر راجیش کمار چھبر نے کہا کہ ہمارے گاہک ہماری پالیسیوں کا محو مرکز ہے اور انکی حفاظت ہمارے لئے سب سے اعلیٰ اور اہم ہے۔چیئرمین نے کہا کہ ایک انسان کیلئے دنیا میں سب سے بڑی دولت اسکی صحت ہے لہٰذا میری تمام گاہکوں سے گزارش ہے کہ وہ اپنی اور اپنے قرابت داروں کی صحت یابی کیلئے بینک شاخوں میں جانے کے بجائے ڈجیٹل بینکنگ چینلوں کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں۔ چیئرمین کا کہنا ہے کہ بینک نے ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت اپنا بزنس کنٹینیوٹی پلان (BCP)  مرتب کیا ہے اور بینک کی اعلیٰ انتظامیہ کی ایک کیوک ریسپانس ٹیم (QRT) بنائی ہے، جسے چیئرمین کی رہنمائی حاصل ہے۔اس منصوبے کا مقصد یہ ہے کہ بینک کے تمام گاہکوں تک بلا خلل بینکنگ خدمات پہنچائی جا سکے ۔جو گاہک ابھی بھی ہمارے اے ٹی ایم ، دفتروں اور برانچوں کا رُخ کر رہے ہیںانہیں کورونا وائرس سے تحفظ فراہم کرنے کیلئے بینک سنجیدہ اقدامات اٹھا رہا ہے۔ عالمی صحت تنظیمWHO اور سرکاری ہدایات کے مطابق ہم اپنے گاہکوں اور ملازمین کو  ضروری احتیاط برتنے کی صلاح بھی دے رہے ہیں۔ اپنے  پیغام میں چیئرمین و منیجنگ ڈایئریکٹر نے  اپنے ملازمین کی صحت و حفاظت کو اپنی پہلی ترجیح بتایا تھا اور تمام ضروری اقدامات اٹھانے  پر زور دیا تھا۔ دریں اثناء آج یعنی 23مارچ سے اپنے کام کاج کے شیڈول میں تبدلی لاتے ہوئے جموں و کشمیر بینک نے اپنے ملازمین کی حاضری میں پچاس فیصد چھوٹ دی رکھی ہے اور تمام دفتروں اور بینک شاخوں میں تین روزہ وقفے کے بعد سٹاف روٹیشن کا اعلان کیا ہے۔اس فیصلے کا مقصد بینک دفتروں اور شاخوں میں ملازمین کی حاضری آدھی کر دینا ہے تاکہ کام کاج بھی چل سکے اور COVID 19کے پھیلاؤ کو بھی کم کیا جاسکے ۔ اسکے علاوہ بینک نے اپنے تمام ترسیلی ذرائع سے عوام الناس اور با لخصوص اپنے گاہکوں تک یہ گزارش بھی پہنچائی ہے کہ وہ اپنے کھاتوں تک آسان رسائی حاصل کرنے کیلئے ڈجیٹل بینکنگ ذرائع جیسے انٹرنیٹ بینکنگ، موبائل بینکنگ، BHIM ,IMPS، کریڈٹ اور ڈیبٹ کارڈ کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں۔ اس دوران وہ اس بات کا بھی خیال رکھیں کہ سائبر جرائم ، آن لائن چوری اور ڈکیٹی سے بھی بچا جا سکے کیونکہ ایسے کئی واردات COVID 19کے بعد رونما ہوئے ہیں۔