بازارحصص میں سب سے بڑی گراوٹ

۔ 15 منٹ میں 8 لاکھ کروڑ روپے ڈوب گئے

24 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

یو این آئی
ممبئی //ملک میں کورونا۔ 19وائرس کے پھیلنے اور اس کی وجہ سے کئی ریاستوں میں لاک ڈاؤن کے بعد گھریلوشیئربازاروں میں افراتفری مچ گئی اور بی ایس ای کا سینسیکس 13فیصد سے زیادہ اور نیشنل اسٹاک ایکسچینج کا نفٹی 11 فیصد سے زیادہ کی ریکارڈ گراوٹ میں بندہوئے جس سے سرمایہ کاروں کے 14اعشاریہ 22لاکھ کروڑ روپے ڈوب گئے ۔گزشتہ کاروباری دن کو29915اعشاریہ 96 پوائنٹس پر بند ہونے والا سینسیکس 2307 اعشاریہ 16کی گراوٹ میں کھلا اور صبح 9بجکر 57منٹ تک 10 فیصد ٹوٹ گیا۔دس فیصدٹوٹتے ہی بازار میں لوور سرکٹ لگ گیا اور کاروبار 45منٹ کے لیے روک دیاگیا۔اس وقت سینسیکس 26942اعشاریہ 11پوائنٹ پر اور نفٹی 7903 پوائنٹ پرتھا۔دس دن کے اندر یہ دوسرا موقع ہے جب بازار میں لوور سرکٹ لگاہے ۔اس سے پہلے 13مارچ کوبھی لوور سرکٹ لگاتھا۔کاروبار کے اختتام پر سینسیکس 3934اعشاریہ 72پوائنٹ یعنی 13اعشاریہ 15فیصد کی گراوٹ میں 25981اعشاریہ 24پوائنٹ پر بندہوا۔دسمبر 2016کے بعد کی یہ نچلی سطح ہے ۔
 

تازہ ترین