تازہ ترین

طالبان سے زیادہ افغان اور نیٹو فورسز کے حملوں میں شہری ہلاک ہوئے

31 جولائی 2019 (00 : 12 AM)   
(      )

یو این آئی
نیویارک// اقوام متحدہ کے مشن کا کہنا ہے کہ 2019 کے پہلے 6 ماہ میں طالبان اور دیگر مسلح تنظیموں سے زیادہ افغان اور نیٹو فورسز کے حملوں میں شہری ہلاک ہوئے۔ رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کی جانب سے شائع ہونے والی رپورٹ میں کہا گیا کہ زیادہ تر شہریوں کی ہلاکت باغیوں کے خلاف افغان اور نیٹو فورسز کے آپریشن، جیسے فضائی حملے اور رات کے وقت مسلح تنظیموں کے ٹھکانوں پر چھاپہ مار کارروائی کے دوران ہوئیں۔ واضح رہے کہ باغی زیادہ تر شہری علاقوں کو چھپنے کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ اقوام متحدہ کے مشن برائے افغانستان کا کہنا تھا کہ افغان فورسز نے رواں سال کے پہلے 6 ماہ میں 413 اور عالمی فورسز نے 314 شہریوں کو ہلاک کیا جس کی کل تعداد 717 ہے، اس کے بر عکس طالبان، داعش اور دیگر مسلح تنظیموں نے اتنے ہی عرصے کے دوران 531 شہری ہلاک کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ 300 سے زائد افراد کو طالبان نے براہ راست نشانہ بنایا تھا، طالبان کی جانب سے تقریباً روزانہ کی بنیاد پر حملے کیے جاتے ہیں جن میں زیادہ تر سیکیورٹی فورسز کو نشانہ بنایا جاتا ہے۔ طالبان نے امریکا سے 18 سال سے جاری جنگ کے خاتمے کے لیے مذاکرات کے باوجود بھی جنگ بندی کو مسترد کردیا ہے۔