تازہ ترین

رشوت کیخلاف جنگجوؤں سے مدد کا مطالبہ | اداروں کی ناکامی کاکھلا اعتراف ہے:انجینئر رشید

23 جولائی 2019 (00 : 12 AM)   
(      )

نیو ڈسک
سرینگر//گورنر کے بیان پر،کہ کئی سابق وزراء رشوت ستانی میں ملوث رہے ہیں،ردعمل کااظہار کرتے ہوئے عوامی اتحاد پارٹی کے صدر انجینئر رشید نے کہاہے کہ سبھی کو رشوت ستانی کے خلاف کسی بھی سنجیدہ مہم کی حمایت کرنی چاہیئے۔تاہم انہوں نے کہا کہ اس مہم کو کامیاب بنانے کیلئے بڑی مچھلیوں سے آغاز کیا جاناچاہیئے۔انہوں نے البتہ گورنر کی جانب سے جنگجوؤں کو رشوت خوروں کو ختم کرنے کا مشورہ دینے پر کہا کہ یہ سرکاری اداروں کی ناکامی کا کھلا اعتراف ہے۔ایک بیان میں انجینئر رشید نے کہا ’’یہ ایک تلخ حقیقت ہے کہ سیاستدانوں،باالخصوص وزراء،نے لوگوں کی مشکلات کا استحصال کرتے ہوئے اپنی دنیا آباد کی ہے تاہم اس سب میں یہ سیاستدان اکیلے ملوث نہیں ہیں بلکہ سیول اور پولیس انتظامیہ کے بعض اعلیٰ لوگ بھی کچھ پیچھے نہ رہے ہیں‘‘۔انہوں نے کہا کہ ایسی شائد ہی کوئی مثال ہوگی کہ جب ریاست میں کوئی بھی شخص اقتدار کے گلیاروں تک پہنچا تو وہ رشوت ستانی میں ملوث نہ ہوا ہولہٰذا گورنر ستیاپال ملک یہ کہتے ہوئے غلط نہیں ہیں کہ سابق وزراء رشوت خور رہے ہیں البتہ ضرورت اس بات کی ہے کہ مجوزہ مہم کو بعض افراد تک محدود نہ کیا جائے بلکہ کسی بھی رشوت خور کو اسکی حیثیت،روابط یا پہنچ کی پرواہ کئے بغیر چھوڑا نہیں جانا چاہیئے۔انجینئر رشید نے کہا کہ ریاستی اور یہاں کے اداروں کے آئین میں گنجائشوں کاناجائز استعمال کرتے ہوئے بعض لوگوں کو انکے لائق یا مستحق نہ ہونے کے باوجود بھی ایگزیکٹیو انجینئر،چیف انجینئر ،حتیٰ کہ منیجنگ ڈائریکٹر اور کمشنر تک بنایا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ گورنرکے جنگجوؤں سے مدد مانگنے سے اندازہ یہ ہوتا ہے کہ وہ رشوت کے خلاف کچھ کرپانے میں موجودہ نظام سے اس حد تک مایوس ہوچکے ہیں کہ وہ سنجیدگی اور مخلصی کی وجہ سے جنگجوؤں سے مدد مانگنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔