تازہ ترین

ٹوٹ پھوٹ کی شکارسڑکیں مرمت کیلئے ترساں

متعلقہ محکمہ غفلت میں ،شہری آبادی مشکلات سے دوچار

21 جولائی 2019 (29 : 11 PM)   
(      )

نمائندہ عظمیٰ
سرینگر //2014کے تباہ کن سیلاب میں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوئی شہر کی سڑکوں کی مرمت میں متعلقہ محکمہ جات مکمل طور پر ناکا م ہو چکا ہے اور شہر میں گلی کوچوں  کے علاوہ اہم رابطہ سڑکیں کھنڈرات میں بدل گئی ہیں محکمہ نے اگرچہ کئی ایک سڑکوں کے کھڈوں کو بھرنے کیلئے اقدامات اٹھائے اور یہ دعویٰ کیا کہ سڑکوں کی مرمت کا کام جاری ہے لیکن شہر کی اکثر سڑکوںکی حالت انتہائی خراب ہے جس کی وجہ سے لوگوں کی زندگی اجیرن بن گئی ہیںگردوغبار سے آئے روز لوگ مختلف بیماریوں میں مبتلا ہورہے ہیں۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ سڑکوں پر جگہ جگہ گہرے گڑھے بن گئے ہیں جن کی مرمت کا کام ابھی تک شروع نہیں کیا گیا ہے ۔لالچوک ریگل سنیماکے نزدیک، ریذیڈنسی روڑک مولانا آزاد روڑ، امیراکدل ، بڈشاہ پْل ، مہاراجہ بازار، کرسو راجباغ بنڈ ، برزلہ بنڈ ، اولڈ برزلہ ، ڈلگیٹ ، نائو پورہ، خانیار، کرانگر، بٹہ مالو اور دیگر ملحقہ علاقوں کی سڑکیں خستہ ہوچکی ہیں۔ لوگوں نے اس حوالے سے کہا ہے کہ متعلقہ محکمہ اْسی وقت سڑکوں کی مرمت کا کام انجام دیا جاتا ہے جب جموں و سرینگر دربار کی منتقلی قریب ہوتی ہے تاہم محکمہ عام لوگوں کو درپیش مشکلات کی طرف دھیان ہی نہیں دیتا۔مقامی لوگوں کے مطابق دربار مو کے ساتھ ہی کچھ سڑکوں کو معمولی تارکول بچھا یا گیا لیکن لوگوں کی مشکلات کے حوالے سے کوئی سنجیدہ اقدامات نہیں کئے جا رہے ہیں ،  اُدھر شہر خاص کے کئی علاقوں میں ڈرنیج سسٹم کو ٹھیک کرنے کے دوران کھودی گئی سڑکوں کی مرمت کے حوالے سے بھی محکمہ عدم دلچسبی کا مظاہرہ کر رہا ہے ۔شہری آبادی نے ریاستی گونر ستیہ پال ملک سے اپیل کی ہے کہ سڑکوں کی مرمت کے حوالے سے سنجیدہ اقدامات اٹھائے جائیں تاکہ لوگوں کو عبور ومرور کے دوران مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔