تازہ ترین

شادی پورہ سمبل اور نارواو شیری بارہمولہ میں3 بچے میں غرقآب

ڈوڈہ کار حادثے میں پولیس افسر لقمہ اجل

16 جولائی 2019 (40 : 10 PM)   
(      )

ارشاد احمد+فیاض بخاری+طاہر ندیم خان
سمبل سوناواری+بارہمولہ+بھدرواہ //شہتل پورہ شادی پورہ  اور کالے بن شیری نارواو بارہمولہمیں 3کمسن بچے غرقآب ہوگئے۔ ادھر ڈوڈہ میں ایک کار حادثے کاشکار ہوکر نالے میں جاگری جس کے نتیجہ میں 55سالہ پولیس افسر لقمہ اجل بن گیا۔سمبل سوناواری سے ملحقہ علاقہ شہتل پورہ شادی پورہ میں6 سالہ ازان عباس وازہ ولد محمدعباس اور اس کا کمسن دوست7 سالہ غازی حسن ڈار ولد غلام حسن دریا جہلم میں ڈوب گئے جن میں سے آزان عباس کو اگرچہ فوری طور پر پر پانی سے بازیاب کیا گیا اور جے وی سی ہسپتال بمنہ سرینگر منتقل کیا گیا تاہم ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا.غازی حسن ڈار کی لاش برآمد کرنے کے لئے مقامی غوطہ غوروں، پولیس اور محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی کے اہلکاروں نے بڑی جدوجہد کے بعد کافی دور سے دریا جہلم سے برآمد کی۔ اس المناک واقعہ کے بارے ایس ایچ او سمبل سوناواری نے بتایا کہ دونوں کمسن بچے دریا جہلم میں گرمی کی شدت کی وجہ سے نہانے اترے تھے جہاں ڈوبنے سے لقمہ اجل بن گئے اگرچہ ایک کی نعش جلد بازیاب ہوئی تاہم دوسرے بچے کی لاش نکالنے کے لئے کافی مشقت کرنی پڑی،اس موقع پر دونوں کمسنوں کی نعشوں کو جب علاقہ میںپہنچایا گیا تو وہاں کہرام مچ گیا ۔ اس دوران کالے بن شیری نارواو بارہمولہ میں منگل کو اُس وقت صف ماتم بچھ گئی جب ایک 12 سالہ لڑکا نزدیکی ندی میں نہانے کے دوران پانی کے تیز بہا و سے وہ اپنے آپ کو بچا نہ سکا اور ڈوب گیا ۔تفصیلات کے مطابق12سالہ حارث احمد بٹ ولد غلام حسن بٹ ساکنہ کالنے منگل کو اپنے ہی گائوں میں ایک ندی میںجہاں پر ایک پُل کا کام بھی چل رہا ہے  نہانے کے غرض سے گیا او ر نہانا شروع کیا اس دوران پانی کے تیز  بہاونے اُسے ڈبو دیا ۔ اس دوران جونہی مقامی لوگوں کو نظر پڑی تو  انہوںنے چیک و پکار کرتے ہوئے آوزیں لگائں تاہم جب تک لوگ جائے وقوع پر پہنچے تب تک مذکورہ لڑکا تیز بہا و میں ڈوب گیا ۔یہ خبر پھیلتے سینکڑوں کے تعداد میں مرد و زن بشمول اس کے گھر والے سینہ کوبی کرتے ہوئے وہاں پر پہنچے اور ڈوبنے والے لڑکے کی تلاش شروع کر دی جس کے بعد اگر چہ مذکورہ لڑکے کو پانی سے برآمدکرکے پرئیمری ہیلتھ سنٹر شیری پہنچا تاہم ڈاکٹروں نے مذکورہ لڑکے کوضلع اسپتال بارہمولہ منتقل کیا جس کے بعد وہاں سے اُسے سرینگر کے صورہ میڈکل انسٹچوٹ  منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کے تاب نہ لاکر دم تورڑ بیٹھا جس کے بعد اُس کے آبائی گائوں میں کہرام مچ گیا۔   ادھر ڈوڈہ میں ایک کار حادثے کاشکار ہوکر نالے میں جاگری جس کے نتیجہ میں 55سالہ پولیس افسر لقمہ اجل بن گیا۔پولیس کے مطابق پولیس پوسٹ دیسہ میں تعینات اسسٹنٹ سب انسپکٹر نیاز احمد ساکن بیولی ضلع ڈوڈہ اپنی آلٹو K10کار زیر نمبرJK06A-4758پر سوار ہوکر گھر سے ڈوڈہ جارہاتھا جس دوران ایچ پی گیس ایجنسی ڈوڈہ کے سٹور کے نزدیک گاڑی اس کے قابو سے باہر ہوکر 350فٹ نیچے نالے میں جاگری ۔پولیس کے ایک سینئر افسر نے بتایاکہ حادثہ کے فوری بعد مقامی لوگوں اور پولیس نے بچائو کارروائی شروع کی اور پولیس افسر کو نالے سے اٹھاکرہسپتال منتقل کیاگیاجہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا۔