تازہ ترین

منجا کوٹ کا نوجوان صحافی سپرد خاک

انجمن اردو صحافت ،پریس کلب مینڈھر اور تھنہ منڈی کی صحافتی برادری کا اظہار تعزیت

12 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

پرویز خان
منجا کوٹ//روزنامہ اڈان سے وابستہ نوجوان صحافی عامر سہیل ولدمولانا گلزار حسین سکنہ سرولہ کو پُر نم آنکھوں کیساتھ سپر د خاک کردیا گیا ۔ان کی نماز جنازہ میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی ۔یاد رہے کہ گزشتہ سب حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے نوجوان صحافی اپنی رہائش گاہ پر لقمہ اجل بن گئے تھے ۔22عامر سہیل کی نماز جنازہ میں سابق ریاستی وزیر و سنیئر کانگریس لیڈر شبیر احمد خان ،نیشنل کا نفرنس سنیئر لیڈر مظفر خان ،روز نامہ اڈان کے مدیر علیٰ اقبال کاظمی ،پولیس اور سیول انتظامیہ کے آفیسرا ن وملازمین نے بھی شرکت کی ۔ اردو صحافیوں کی ریاست گیر تنظیم ’انجمن اردو صحافت جموں وکشمیر‘ نے عامر سہیل کی وفات پر ان کے پسماندگان اور روزنامہ اڈان کے مدیراعلیٰ اور دیگر عملہ کے ساتھ تعزیت وہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کی جنت نشینی کیلئے دعا کی ہے۔انجمن کے نائب صدر عشرت حسین بٹ اور صوبائی صدر جموں اشتیاق ملک بھلیسی نے اپنے تعزیتی پیغامات میں مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان کی صحافتی خدمات کو بہت دیر تک یاد کیاجائے گا او ر اس ساتھی کی جواں مرگی کی وجہ سے پیر پنچال کے صحافتی منظر نامہ پر جو خلاء پیدا ہوا ہے،اُس کو پُر کرنا مشکل ہے ۔عشرت بٹ اور بھلیسی نے انجمن کی اعلیٰ قیادت کی جانب سے بھی سوگواران اور روزنامہ اڈان کی انتظامیہ سے تعزیت کا اظہار کیا ہے۔پریس کلب مینڈھر میں روز نامہ اڈان سے وابستہ نوجوان صحافی عامر سہیل کی وفات پر ایک تعزیتی اجلاس کا اہتمام کیا گیا ۔جاوید اقبال کی صدرا ت میں منعقدہ اجلاس میں متعدد صحافیوں نے شرکت کی ۔اراکین نے مرحوم کی وفات پر رنج و غم کا اظہار کرتے ہو ئے لواحقین کیساتھ ہمدردی کا اظہار کیا ۔اجلاس میں میں سید تعظیم حسین شاہ ،ناظم علی منہاس ،اعجاز کوہلی ،طارق خان انقلابی، سبھاش چندر بالی ،رونی چندن ،ونود دتہ ،راہی کپور ،داود خان کے علاوہ دیگرصحافیوں نے شرکت کی ۔ادھرتھنہ منڈی کی صحافی برادری نے روزنامہ اڈان کیساتھ منسلک نوجوان صحافی عامر سہیل کی اچانک ہو ئی موت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین کیساتھ ہمدردی کا اظہار کیا ہے ۔یہاں جاری ایک مشترکہ بیان میں طارق شال،نثار خان،عمران خان،جاوید خان،جہانگیر خان ودیگران نے کہا ہے کہ عامر سہیل کی موت صحافی طبقہ کیساتھ ساتھ لواحقین کیلئے ایک بڑا نقصان ہے ۔انہوں نے مرحوم کیلئے دعامغفرت بھی کی ہے۔