تازہ ترین

معیشت کیلئے جراتمندانہ قدم اٹھانے سے گریز کر رہی ہے حکومت: چدمبرم

12 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

یواین آئی
نئی دہلی // کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم نے عام بجٹ میں بنیادی ڈھانچہ کی اصلاحات کی کمی پر آج گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ابھی ملک کی معیشت انتہائی کمزور ہے اور بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت واضح اکثریت کے باوجود معیشت کو مضبوط بنانے کے لئے ‘ جرائمندانہ فیصلے ’نہیں لے رہی ہے ۔ مسٹر چدمبرم نے راجیہ سبھا میں بجٹ پر بدھ سے جاری بحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ گزشتہ 20-25 سالوں میں صرف 11 مرتبہ ہی بجٹ میں بنیادی ڈھانچہ کی اصلاحت کی گئی ہیں اور ان میں سے زیادہ تر اصلا حات سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ کے دور میں ہوئی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ معیشت میں ہر تبدیلی کو اصلاحات کا نام نہیں دیا جا سکتا ۔لائسنس راج اور غیر ملکی کرنسی ایکٹ سے متعلق قانون کو کالعدم قرار دیا جا نااقتصادی اصلاحات کے زمرے میں آتے ہیں لیکن اس بجٹ میں ایسا کوئی بنیادی ڈھانچہ کی اصلاحات نہیں کی گئی ہے ۔ کانگریس رکن نے کہا کہ انہیں حیرانی ہوتی ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کو 303 سیٹوں کے واضح اکثیر یت حاصل ہے لیکن وہ معیشت کو مضبو ط بنانے کے لئے جرائمندانہ قدم اٹھانے سے کیوں گریز کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس نے 140 اور 206 نشستوں کے ساتھ حکومت چلائی اگر اس کو بھی واضح اکثریت حاصل ہوتی تو وہ ‘جرائمندانہ فیصلے ’ لینے سے پیچھے نہیں ہٹتی ۔ ملک کی معیشت کو سال 2025 تک 50 کھرب ڈالر بنانے کے اعلان پر طنز کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مودی حکومت اسے ‘تل کا تاڑ’ کی طرح پیش کر رہی ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ ہماری معیشت 12 فیصد اضافہ کی شرح کے ساتھ خود ہی ہر 6 سال میں دگنی ہو رہی ہے ۔ یہ عام عام اعداد و شمار ہیں اس میں کوئی بڑی بات نہیں ہے ۔