تازہ ترین

افغانستان میں دھماکے سے19ہلاک، 170افراد زخمی

8 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

یو این آئی
 کابل//افغانستان کے غزنی اور صوبہ غور میں ہوئے دھماکوں کی وجہ سے 19افراد ہلاک اور 60دیگر زخمی ہوگئے ۔ذرائع کے مطابق غزنی شہر میں اتوار کو افغانستان انٹیلی جنس سروس کے ہیڈ کوارٹر کو نشانہ بنا کر کئے گئے دھماکے سے آٹھ سکیورٹی اہلکاروں اور چار شہری کی موت ہو گئی جبکہ 170دیگر زخمی ہو گئے ہیں ۔ سرکاری ترجمان نے یہ اطلاع دی۔ترجمان عارف نوری نے بتایا کہ آج مقامی وقت کے مطابق 8 بجکر 30 منٹ پر ایک کار بم سے افغانستان کی انٹیلی جنس سروس کے ہیڈ کوارٹر کو نشانہ بناتے ہوئے دھماکے کو انجام دیا گیا جس سے آٹھ سکیورٹی اہلکاروں اور چار شہریوں کی موت ہو گئی ۔ مقامی حکام کے مطابق اس دھماکے میں 60 سے زائد افراد زخمی ہوئے ہے ۔ دھماکہ اسکول کے نزدیک ہوا جس سے زیادہ تر بچے زد میں آکر زخمی ہو گئے ۔صوبہ غور میں اتوار کو دھماکہ خیز آلات (آئی ای ڈی) کے دھماکے میں کم از کم سات بچوں کی موت ہو گئی ، جبکہ ایک دیگر زخمی ہوگیا۔ ابھی تک کسی نے اس دھماکے کی ذمہ داری نہیں لی ہے ۔ اس سے قبل غزنی شہر میں طالبان جنگجوؤں کے حملے میں 12 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے اور 170 دیگر کو زخمی ہوگئے ۔ افغان صدر اشرف غنی نے طالبان کی بمباری کی سخت مذمت کرتے ہوئے زور دیا کہ اس سے بنیاد پرست تحریک کے قول و عمل کے درمیان تضاد ظاہر ہوگیا ہے ۔ انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ "ایسے دہشت گردانہ حملے کے ساتھ طالبان نے اپنے قول اور فعل کے درمیان تضاد دکھایا ہے ۔ ایک طرف وہ قطر میں امن کی بات کر رہے ہیں تو دوسری طرف ان کے جنگجو ہر روز بچوں اور خواتین سمیت معصوم لوگوں کو قتل کر رہے ہیں۔ یہ واقعات ایسے وقت میں ہوئے ہیں جب طالبان کے رہنما ؤں پر مشتمل ایک غیر سرکاری وفد اتوار کو قطر کے دارالحکومت دوحہ سٹی میں دو روزہ بین- افغان امن مذاکرات میں حصہ لے رہے ہیں۔ افغان مذاکرات کے اہم مقاصد میں سے ایک افغانستان سے امریکی فوجیوں کی واپسی کے لئے وقت مقرر کرنے پر اتفاق رائے قائم کرناہے ۔