تازہ ترین

کرگل میں کمرشل فلائٹس کیلئے مکمل ہوائی اڑے کا قیام

ائیر پورٹ اتھارٹی آف انڈیا کیساتھ چیف سیکریٹری کا تبادلہ خیال

16 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
نئی دہلی// چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم نے یہاں شہری ہوا بازی کے مرکزی سیکرٹری اور ائیر پورٹ اتھارٹی آف انڈیا کے افسروں کے ساتھ ایک میٹنگ کے دوران کرگل میں موجودہ ہوائی اڈے کو کمرشل پروازوں بشمول بوئنگ اور ائیر بس کیلئے مکمل طور سے چالو کرنے سے متعلق امور کا جائیزہ لیا۔اضافی اراضی اور دیگر امور کو حتمی شکل دینے کے تعلق سے اس موقعہ پر فیصلہ لیا گیا کہ اے اے آئی کی ٹیم 20 جون2019 کو کرگل کا دورہ کر ے گی اور اس کے بعد اے اے آئی کی تکنیکی ٹیم27 جون سے15 دنوں تک کرگل کا دورہ کرے گی اور تکنیکی امور کو حتمی شکل دے گی۔اے اے آئی کے ساتھ15 جولائی2019 تک ایک مفاہمت نامے پر دستخط ہونے کی اُمید ہے۔رن وے کو توسیع دینے کا سنگ بنیاد اگست2019 کے آخر تک رکھا جاسکتا ہے اور اس کے ساتھ ہی باقی کاموں کی شروعات کی جاسکے گی۔قابل ذکر بات ہے کہ کرگل میں اس وقت600 فُٹ رن وے والا سول ائیر پورٹ موجود ہے جہاں اے ٹی سی ٹاور کی سہولیات بھی دستیاب ہیں۔
ائیر پورٹ اتھارٹی آف انڈیا اور انڈین ائیر فورس کے درمیان20 اکتوبر2016 کو مفاہمت نامہ پر دستخط کئے گئے تھے۔گورنر انتظامیہ کرگل ہوائی اڈے کو ایک مکمل کمرشل ہوائی اڈہ بنانے کی خاطر متمنی ہے تا کہ کرگل کو لیہہ کی طرز پر سیاحتی سرگرمیوں کا مرکز بنایا جاسکے اور اس قدم سے لداخ خطے کے نوجوانوں کیلئے روز گار کے زیادہ سے زیادہ مواقعے پیدا ہونے کے ساتھ ساتھ خطے کو موسم سرما کے دوران بہتر رابطے کی سہولیات دستیاب ہوں گی۔گورنر کی ہدایات پر چیف سیکرٹری اس معاملے کی مسلسل پیروی کرتے آرہے ہیں اور یہ معاملہ لگاتار مرکزی حکومت کے ساتھ اُٹھایا جارہا ہے۔ریاستی حکومت نے کرگل ہوائی اڈے کو ترقی دینے کے لئے پہلے ہی200 کروڑ روپے کی رقم مختص کی ہے۔