تازہ ترین

ہندوستانی معیشت 5 لاکھ کروڑ ڈالر کا ہدف حاصل کرنے کی اہل : مودی

16 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

 نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے ‘سب کا ساتھ، سب کا وکاس اور سب کا وشواش ’کے ہدف کو پورا کرنے میں نیتی آیوگ کے اہم کردار کا ذکر کرتے ہوئے ہفتہ کو کہا کہ سال 2024 تک ملک کو پانچ لاکھ کروڑ ڈالر کی معیشت بنانے کا ہدف چیلنج سے بھرپور ہے لیکن حاصل کرنے کی اہل ہے ۔مسٹر مودی نے راشٹرپتی بھون کے ثقافتی مرکز میں منعقدہ نیتی آیوگ کی گورننگ کونسل کی پانچویں میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ آمدنی اور روزگار میں اضافہ کے لئے برآمداتی شعبہ بہت اہم ہے اور ریاستوں کو برآمدات کے فروغ پر توجہ دینی چاہئے ۔ دنیا کے سب بڑی جمہوریت ہندوستان میں حال ہی میں اختتام پذیر عام انتخابات کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اب تمام ممالک کو ترقی کے لئے کام کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے غریب، بے روزگاری، خشک سالی، سیلاب، آلودگی، بدعنوانی اور تشدد وغیرہ سے سب کو مل کر لڑنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ٹیم انڈیا کے اس پلیٹ فارم پر ہر کسی کا ایک ہی ہدف 2022 تک نیا ہندوستان کی تعمیر کرنا ہے ۔سوچھ بھارت ابھیان اور پردھان منتری رہائش گاہ یوجنا کو ملنے والی کامیابی کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مرکز اور ریاست کے ساتھ مل کر کام کرنے سے یہ کامیابی مل سکتی ہے ۔ وزیراعظم نے کہا کہ بااختیار بنانے اور رہن سہن کی سہولت ہر ایک ہندوستانی کو دستیاب کرانا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مہاتما گاندھی کی 150 ویں یوم پیدائش کے لئے مقررہ ہدف کو دو اکتوبر تک مکمل کیا جانا چاہیے اور ملک کی آزادی کی 75 ویں سالگرہ کے لئے مقرر ہدف کو حاصل کرنے کے لئے کام شروع کیا جانا چاہئے ۔انہوں نے مختصر اور طویل مدتی ہدف کو حاصل کرنے پر اجتماعی طور پر توجہ مرکوز کئے جانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ملک کو سال 2024 تک پانچ لاکھ کروڑ ڈالر کی معیشت بنانے کا ہدف رکھا گیا ہے جو مشکل ضرور ہے لیکن اس کو حاصل کیا جا سکتا ہے ۔ انہوں نے ریاستوں کو اپنی اہم صلاحیت کو پہچاننے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ جی ڈی پی کو بڑھانے کی پہل ضلع کی سطح پر شروع کی جانی چاہئے ۔مسٹر مودی نے ترقی پذیر ممالک کے لئے برآمدات کو اہم جزء بتاتے ہوئے کہا ہے کہ ہر شخص کی آمدنی میں اضافہ کے لئے مرکز اور ریاست دونوں کو اسے بڑھانے پر کام کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ شمال مشرق سمیت کئی ریاستوں میں برآمدات کے بڑے امکانات ہیں جس کا اب تک استعمال ہی نہیں کیا گیا ہے ۔ ریاستی سطح پر برآمدات کو بڑاہوا دینے سے آمدنی اور روزگار دونوں میں اضافہ ہوگا۔ وزیر اعظم نے پانی کو زندگی کا ایک اہم حصہ بتاتے ہوئے کہا کہ ناکافی پانی کے تحفظ کا اثر غریبوں پڑ تا ہے ۔ جل شکتی کی وزارت کا حوالہ دیتے ہوئے ، انہوں نے کہا کہ یہ وزارت پانی کے سلسلے میں جامع پہل کرے گی ۔ پانی کے تحفظ اور انتظام پر زور دیتے ہوئے ، انہوں نے ریاستوں سے مطالبہ کیا کہ دستیاب عوامی وسائل کا بہتر انتظام انتہائی اہمیت کا حامل ہے ۔ ملک کے دیہی علاقوں میں تمام گھروں کو 2024 تک پائپ سے پانی کی فراہمی کے ہدف کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پانی کے تحفظ اور پانی کی سطح کو بڑھانے پر توجہ مرکوز کی جانی چاہئے ۔ پانی کے تحفظ اور انتظام کے بارے میں بہت سی ریاستوں کی طرف سے کئے جانے والے کام کی تعریف کرتے ہوئے مسٹر مودی نے کہا کہ پانی کے تحفظ اور انتظام کے لئے ایک مثالی اصول بنانے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کی زرعی آبپاشی منصوبہ کے تحت ضلع آبپاشی منصوبہ کو احتیاط سے نافذ کیا جانا چاہئے ۔ یو این آئی۔