تازہ ترین

طلاب کی رسائی پر قدغن | میلہ کو سیاست کی نذر کرنے کا الزام

16 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

بلال فرقانی
 سرینگر//جامعہ کشمیر میں سنیچر کو پولیس کی طرف کتابی میلہ میں طلاب کی رسائی پر قدغن لگائی گئی،جس پر انہوں نے برہم ہوکر کہا کہ میلہ کو سیاست کی نذر کیا جارہا ہے۔ یونیورسٹی کے ابن خلدون آڈیٹوریم کے باہر اس وقت غیر یقینی صورتحال رونما ہوئی جب کتاب میلے کے افتتاحی سیشن سے ڈاکٹر فاروق عبداللہ مخاطب ہورہے تھے ۔ عینی شاہدین کے مطابق کتاب میلے کے ابتدائی سیشن کے دوران کسی بھی طالب علم کو آڈیٹوریم کے اندر جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر چہ جامعہ میں زیر تعلیم طلبا و طالبات کی ایک بڑی تعداد کتابوں کی نمائش و خریداری کیلئے یہاں دور دور سے پہنچے تھے تاہم یہاں تعینات پولیس اہلکاروں نے انہیں اندر جانے کی اجازت نہیں دی۔طلبا کے مطابق یونیورسٹی کو صبح سے ہی فورسز نے اپنی تحویل میں لے رکھا تھا جس دوران طلبا و طالبات کو ابن خلدون آڈیٹوریم کے اندر قطعی طور پر اندر جا نے کی اجازت نہیں دی گئی۔ عینی شاہدین کے مطابق اس دوران طلبا و طالبات نے یہاں جاری صورتحال کی تصاویر کو سماجی میڈیا پر  اشتراک کیا۔طلبا کے بقول یونیورسٹی کے کیمپس کو فوجی چھاونی میں تبدیل کیا گیا تھا تاکہ یہاں ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی نقل و حمل بلا خلل ممکن ہوسکے۔عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ چند طلاب نے آڈیٹوریم کے اندر داخل ہونے میں کامیابی حاصل کرلی تاہم پولیس نے انہیں وہاںسے نکال باہر کیا گیا۔