تازہ ترین

شنگھائی کانفرنس میں وزیر اعظم مودی کا خطاب

دہشت گردی کے حامی ممالک کیخلاف اتحاد لازم

15 جون 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر//وزیر اعظم نریندر مودی نے شنگھائی کانفرنس میں شریک ممالک کو دہشت گردی کے خلاف متحد ہونے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے ایس سی او ممالک کا تعاون لازمی ہے۔وزیرا عظم نریندر مودی نے کرغزستان کے دارالحکومت بشکیک میں منعقدہ شنگھائی تعاون تنظیم یعنی ایس سی او کے اجلاس کے دوران شریک ممبران پر زور دیا کہ وہ دہشت گردی کے ناسور کو جڑ سے اُکھاڑ پھینکنے کیلئے متحد ہوجائیں۔ مودی کے بقول دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کیلئے ہمارا اتحاد لازمی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ دہشت گردی پر عالمی سطح کی کانفرنس منعقد ہونی چاہیے تاکہ عالمی سطح پر سبھی ممالک اس کے خلاف یک جٹ ہوجائیں۔ نریندر مودی نے کہا کہ دہشت گردوں اور اُن کے معاونین کے خلاف کڑا رخ اپنانے کی ضرورت ہے تاہم اس کیلئے عالمی سطح پر تمام ممالک کو یک جٹ ہونے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے بتایا کہ عالمی سطح پر دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کی خاطر ایک کانفرنس منعقد کی جانی چاہیے جس میں دہشت گردی کی حمایت کرنے والے ممالک کو سخت پیغام دینے کی ضرورت ہے۔ نریندر مودی نے کہا کہ دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے ایس سی او ممالک کا تعاون بھی ضروری ہے۔اس کے علاوہ مودی نے ایس سی او ممالک کے درمیان تعلقات مضبوط کرنے پربھی زور دیا۔دو روزہ چوٹی کانفرنس کے دوران جمعہ کو آخری دن وزیرا عظم نریندر مودی اور رکن ممالک کے لیڈروں کی میٹنگ شروع ہوگئی ہے۔ ادھر وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے میٹنگ کی اطلاع سماجی رابطہ سائٹ ٹویٹر پر شائع کی۔ رویش کمار نے بتایا کہ ’’دورہ کرغزستان کے دوران پی ایم مودی روس کے صدر ولادیمیر پوتن، چینی صدر شی جنپنگ سمیت ایس سی او کے لیڈروں کیساتھ فوٹو سیشن میں شامل ہوئے‘‘۔ انہوں نے بتایا کہ ’’کرغزستان کے صدر اور ایس سی او چوٹی کانفرنس 2019کے موجودہ صدر سورونبے جین بیکو نے جمعہ کی صبح ایس سی او چوٹی کانفرنس میں شامل ہونے کیلئے صدارتی محل پہنچنے پر وزیراعظم نریندر مودی کا گرم جوشی کیساتھ خیر مقدم کیا‘‘۔اس دوران نریندر مودی نے جمعرات کو یہاں پہنچنے کے بعد پوتن، جنپنگ اور افغانستان کے صدر اشرف غنی کیساتھ دوطرفہ بات چیت کی اور امن عمل میں ہندوستان کے ذریعے ادا کئے گئے کردار پر بھی تفصیل کیساتھ بات چیت کی۔