تازہ ترین

کے وِجے کمار نے امرناتھ یاترا کے اِنتظامات کا جائزہ لیا

31 مئی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

 جموں//گورنر کے مشیر کے وِجے کمار نے جموں میں اعلیٰ افسران کی ایک میٹنگ طلب کر کے شری امرناتھ جی یاترا ۔2019 ء کے سلسلے میں کئے جارہے انتظامات کا جائزہ لیا۔میٹنگ میں پولیس سربراہ دِلباغ سنگھ ، ڈویژنل کمشنر جموں سنجیو ورما، اے ڈی جی سی آئی ڈی سری نواس ، آئی جی پی جموں ایم کے سنہا،آئی جی ٹریفک آلوک کمار ، آئی جی سی آر پی ایف اے وی چوہان ،آئی جی بی ایس ایف این ایس جموال ، ڈپٹی کمشنر جموں رومیش کمار ،چیف انجینئر پی ڈبلیو ڈی ، پی ڈی ڈی ، ناظم صحت اور دیگر کئی محکموں کے سربراہان و افسران موجود تھے۔صوبائی کمشنر نے یاترا کے لئے کئے جارہے انتظامات کے بارے میں تفصیلی جانکاری دی۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ یاترا یکم جولائی سے شروع ہوگی اور 46روز جاری رہنے کے بعد 15اگست کو اختتام پذیر ہوگی۔میٹنگ میںمزید بتایا گیا کہ تمام اضلاع میں ہالٹنگ پوائنٹ قائم کئے گئے ہیں جن میں کٹھوعہ میں 6 ، جموں میں 17 ، اودھمپور میں 26اور رام بن میں 22 پوائنٹ شامل ہیں۔اس کے علاوہ 17مختلف مقامات پر موبائیل بیت الخلاء لگائے گئے ہیں جبکہ یاترا کے دوران 105لنگر قائم کئے جارہے ہیں جن میں جموں میں 17 ، کٹھوعہ میں 8، اودھمپور میں 10اور رام بن ضلع میں 28لنگر شامل ہیں۔صوبائی کمشنر مزید بتایا کہ یاترا کے راستے پر مناسب تعداد میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے گئے ہیں۔جموں ، سنگم ، سرسوتی دھام ، ویشو ی دھام ، رام مندر، پرانی منڈی اور دیگر کئی مقامات پر یاتریوں کی رجسٹریشن کے لئے سہولیات دستیاب رکھی گئی ہیں۔ صوبائی کمشنر جموں نے مشیر موصوف کو بتایا کہ یاتری نواس کی ضروری مرمت اور تجدید کی گئی ہے اور یہاں یاتریوں کے لئے ہر طرح کے انتظامات مکمل کئے گئے ہیں۔مشیرموصوف نے یاترا کے لئے سیکورٹی انتظامات کا بھی جائزہ لیا گیا۔ متعلقہ افسران نے انہیں بتایا کہ یاترا کے احسن انعقاد کے لئے سیکورٹی کے معقول انتظامات کئے گئے ہیں۔آئی جی ٹریفک نے نیشنل ہائی وے 44 پر ٹریفک کے بلا خلل نقل حمل کے لئے کئے گئے اقدامات کے بارے میں تفصیلی جانکاری دی ۔مشیر موصوف نے نیشنل ہائی وے اتھارٹی آف انڈیا اور محکمہ صحت کے علاوہ دیگر متعلقہ محکموں کے افسران کو یاترا خوش اسلوبی کے ساتھ انجام تک پہنچانے کے لئے ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت دی۔کے وِجے کمار نے اس سلسلے میں التوا میں پڑے دیگر تمام کام جلد از جلد پایۂ تکمیل کو پہنچانے پر زوردیا۔