تازہ ترین

بنگال کے سیاسی تجزیہ نگاروں نے ایگزٹ پول کوخارج کیا

21 مئی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

یو این آئی
کلکتہ //لوک سبھا انتخابات کی پولنگ ختم ہونے کے بعد بیشتر ایگزٹ پول میں نے مغربی بنگال میں بی جے پی کو ایک بڑی طاقت کے طور پر ابھرتے ہوئے دکھلایا ہے ۔ساتھ ہی پیش گوئی کی گئی ہے کہ ترنمول کانگریس کو شدید نقصان ہوسکتا ہے ۔تاہم بنگال کے سیاسی تجزیہ نگاروں نے ایگزٹ پول کو خارج کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترنمول کانگریس کو جتنی سیٹوں کا[؟] نقصان دیکھا یاجارہا ہے وہ نہیں ہونے جارہا ہے ۔مگر بی جے پی کا ووٹ فیصد اس مرتبہ اضافہ ضرور ہوگا۔ خیال رہے کہ بیشتر ایگزٹ پول میں بی جے پی کو 11سے 19سیٹیں ملنے کی پیش گوئیکی ہے ۔مگر ممتا بنرجی نے ایگزٹ پول کو خارج کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ صرف ای وی ایم مشین میں س گڑبڑی پیدا کرنے کی کوشش کے علاوہ کچھ بھی نہیں ہے اور انہوں نے ملک کی تمام اپوزیشن جماعتوں سے متحد ہوکراس حالات کامقابلہ کرنے کی اپیل کی ہے ۔ پولیٹیکل سائنس کے پروفیسر معید الاسلام نے کہا کہ میں کسی بھی ایگزٹ پول کو سنجیدگی سے لینے کے حق میں نہیں ہوں، صرف بنگال میں ہی نہیں بلکہ ملک بھر میں بی جے پی جتنی سیٹیں ملنے کا دعویٰ کیا جارہا ہے وہ ناقابل یقین ہے ۔ہم سب کو 23مئی کا انتظار کرنا چاہیے اور وہی فائنل ریزلٹ ہوگا۔اسی طرح کے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے سیاسی تجزیہ نگاربسواناتھ چکرورتی نے کہا کہ [؟]کوئی بھی پانچ ایگزٹ پول کے دعوؤں پر یقین نہیں کرے گا۔یہ ایگزٹ پول حکمراں جماعت کی جانبداری پر مبنی ہے ۔تاہم بی ج ے پی بنگال میں اپنی طاقت میں اضافہ کیا ہے مگر یہ کہنا مشکل ہے کہ بی جے پی 12سیٹیں حاصل کریں گی۔ پروفیسر معید الاسلام نے کہا کہ بنگال میں بی جے پی کی وہی پوزیشن ہے جو 2001میں ترنمول کانگریس کی تھی۔اس وقت ترنمول کانگریس نے بھی حکومت سازی کادعویٰ کیا تھا مگر ایسا نہیں ہوسکا تھا۔اس وقت یقینا بنگال میں بی جے پی نے اپنی طاقت میں اضافہ کیا ہے اور کئی علاقوں میں اپنی پکڑ مضبوط کی ہے ۔مگر اب بھی بی جے پی نے دیہی علاقوں میں اپنی پہنچ نہیں بناپائی ہے ۔اگر بی جے پی کو 8سے 9سیٹیں مل جائیں تو میں حیران رہوں گا۔شہری علاقوں کے مقابلے دیہی علاقوں کے ووٹرس کو اپنی وفاداری تبدیل کرنے میں وقت لگتا ہے ۔ معید الاسلام نے کہا کہ دائیں بازوں نظریات کے حاملین اپنے سیاسی نظریات کو بیان کرنے میں توقف نہیں کرتے ہیں۔جب کہ بی جے پی مخالف ووٹرس خاموشی کو ترجیح دیتے ہیں۔یہ اعداد و شمار ووٹوں کی گنتی سے قبل شیئر مارکیٹ میں یقین قائم کرنے اور لوگوں کو لطف اندوز ہونے کیلئے بہتر ہے ۔ بنگو باشی کالج میں شعبہ سیاسیات کے صدر اور ایسوسی ایٹ پروفسیر ادیا بندو پادھیائے نے اس سوال پر کہ ترنمول کانگریس کو کتنی سیٹیں ملیں گی انہوں نے کہا کہ ترنمول کانگریس 29سیٹیں جیتنے میں کامیاب ہوجائے گی۔جب کہ بی جے پی پرولیا، بالور گھاٹ، رانا گھاٹ اور جھاڑ گرام کی سیٹیں جیتنے میں کامیاب ہوں گی۔جب کہ دارجلنگ، علی پور دوار، رائے گنج، مالدہ جنوب، بہرام پور، کرشنا نگر اور بانکوڑہ میں دوسری پارٹیاں بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی۔انہوں نے کہا کہ ایگزٹ پول مصنوعی ہے ۔جب ان سے یہ سوال کیا گیا کہ کیا ممتا بنرجی 42میں سے 42سیٹ جیتنے میں کامیاب ہوں گی تو انہوں نے کہا کہ یہ مشکل ہے ۔انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہے آسنسول میں بی جے پی کوشکست ہوگی۔اور ترنمول کانگریس یہاں سے کامیاب ہوگی۔