تازہ ترین

کشمیر سیاسی اور انسانی مسئلہ:گیلانی

19 مئی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیو ڈسک
سرینگر//سیدعلی گیلانی چیئرمین حریت(گ)کی صدارت میں منعقدہ حریت مجلس شوریٰ کے اجلاس میں ریاست کی تازہ سیاسی صورتحال کاجائزہ لیاگیا۔ایک بیان کے مطابق اجلاس میں مختلف امورسے متعلق شرکاء اجلاس کی تجاویز کاجائزہ لینے کے بعد حریت (گ)چیئرمین سیدعلی گیلانی نے اپنے خطاب میں رواں جدوجہدکے دوران عوام کی قربانیوں کوخراج تحسین اداکرتے ہوئے کہا کہ حریت (گ) عوام کی قربانیوں کی حفاظت کرنے میں کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں کرے گی۔انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر ایک انسانی اورسیاسی مسئلہ ہے اور ریاستی عوام کے دیرینہ مطالبے کو ایک منظم اور پرامن تحریک کے ذریعے عالمی ایوانوں تک پہنچانے میں کسی ناامیدی کاشکار نہیں ہونا چاہیے ۔انہوں نے فورسز اور انتظامیہ کی طرف سے ریاستی عوام اور قیادت کے سیاسی،معاشی،جمہوری مذہبی اورانسانی حقوق کوتلف کرنے کی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ روئے زمین پر اس وقت کسی خطے یا ملک کو اس قدرظلم کا سامنا نہیں ہے جتناریاستی عوام کو ہے۔حریت چیئرمین نے ریاست کی موجودہ صورتحال کو گھمبیرقراردیتے ہوئے کہا کہ آپریش آل آئوٹ کے تحت عوام کو مظالم کاشکار بنایا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ شبانہ محاصروں،گرفتاریوں اور تلاشی کارروائیوں سے عوام کو سکون سے محروم رکھاجارہا ہے ۔  حریت رہنما نے اجلاس میں شریک جملہ اکائیوں کو تلقین کرتے ہوئے کہا کہ وہ کسی بھی دباؤ کوردکرتے ہوئے اپنی ذمہ داریوں کو نبھانے کی ہر ممکن کوششوں کو جاری رکھیں۔ اجلاس میں اقوامِ متحدہ سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ مسئلہ کشمیر کے دیرینہ مسئلے کو حل کرنے کے لیے اپنی آئینی ذمہ داریوں کو نبھائیں۔ اجلاس میں 26مئی اتوارکو حیدرپورہ میں ’’پیام رمضان‘‘ کے موضوع پر ایک روح پرورسمینار منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں جماعت اسلامی اور جموں کشمیر لبریشن فرنٹ تنظیموں پر عائد پابندی کو بلاجواز اور سامراجی کارروائی قرار دیتے ہوئے اس کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کی گئی۔ اجلاس میں غلام نبی سمجھی، بشیر احمد اندرابی، حکیم عبدالرشید، سید محمد شفیع، غلام محمد ناگو، محمد یٰسین عطائی، محمد مقبول ماگامی ، ارشد عزیز، خواجہ فردوس احمد، مولوی بشیر احمد عرفانی ، محمد یوسف نقاش، زمرودہ حبیب، بلال صدیقی اور غلام احمد گلزار شامل تھے۔