تازہ ترین

صحرائی کا قائدین واراکین کی مسلسل اسیری پراظہار تشویش

15 مئی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیو ڈسک
سرینگر// تحریک حریت کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے ایک بیان میں محمد یوسف فلاحی،عبدالغنی بٹ ،محمد امین آہنگر ،سید امتیاز حیدر ،منظور احمد گنائی ،نذیر احمد مانتو،،جاوید احمد پھلے ،محمد حسین وگے ،غلام محمد مسگر ،عبدالحمید پرے،دانش مشتاق ملک،ناصر عبداللہ ،بشیر احمد بٹ ،سجاد احمد بٹ ،عبدالاحد تیلی، عبدالاحد میر ،فاروق احمد شاہ، محمد رمضان شیخ  ،عبدلطیف ڈار ،سجاد احمد بٹ، ،تعشوق احمد بانڈے،قاری عبدالاحد ،مشتاق احمد ہرہ،محمد یٰسین تانترے ،طٰسین احمد ہرہ اور دیگر نوجوانوں کی مسلسل گرفتاری اور قیدوبند میں ان کی گرتی ہوئی صحت پر سخت تشویش کا اظہار کیا ۔انہوں نے اسیروں کو علاج و معالجہ کی سہولیات بہم رکھنے کی تاکید کرتے ہوئے کہا کہ جس طریقے سے حکام ان کے ساتھ ظالمانہ سلوک جاری رکھے ہوئے ہے وہ انتہائی مجرمانہ ہے اور دنیا کے کسی بھی خطہ اور کسی بھی قانون کے تحت ایسا برتائو قابل قبول نہیں ۔انہوں نے ریاست کی موجودہ صورتحال کی جانب عالمی برادری کی توجہ مبذول کراتے ہوئے کہا کہ اگر جموں کشمیر کے تنازعہ کو فوری طور حل کرنے کی کوشش نہیں کی گئی تو بر صغیر کے دو نیوکلیائی قوتوں کے بیچ ہولناک جنگ چھڑ سکتی ہے جو عالم انسانیت کی تباہی پر منتج ہوگی ۔ انہوں نے جنوبی کشمیر کے شوپیان ، پلوامہ،کولگام ترال اور دیگر علاقوں میںنوجوانوں کی شبانہ گرفتاریوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس سے حالات مزید ابتر اور بے قابوں ہوں گے ۔