لوک سبھا انتخاب ملک کی ترقی کی رفتار کو طے کرے گا: مودی

15 مئی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

یو این آئی
 بکسر //وزیراعظم نریندر مودی نے آج ووٹروں سے مرکز میں قومی جمہوری اتحاد ( این ڈی اے ) کی مضبوط حکومت کیلئے حمایت دینے کی اپیل کرتے ہوئے کہاکہ اس بار کا انتخاب یہ طے کرے گا کہ 21 ویں صدی میں ہندوستان کی ترقی کی رفتار کتنی تیز ہوگی ۔ مسٹر مودی نے بکسر سے بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) کے امیدوار اشونی چوبے کی حمایت میں اہرولی میں منعقدہ انتخابی جلسہ کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتخاب صرف یہ طے کرنے کیلئے نہیں ہے کہ کون سی جماعت یا گٹھ بندھن جیتے گا بلکہ یہ انتخاب طے کرے گا کہ آنے والے سالوں میں ہندوستان کتنی تیزی سے ترقی کرے گا۔ یہ انتخاب اکیسویں صدی کے ہمارے بچوں کے مستقبل کو طے کرنے والا ہے ۔ انہوں نے کانگریس ، راشٹریہ جنتادل ( آر جے ڈی ) اور اس کے دیگر حلیف جماعتوں کو مہا ملاوٹی کا خطاب دیتے ہوئے کہاکہ یہ لوگ ہندوستان کی ترقی کی بات نہیں کرتے ہیں۔انہیں صرف اپنے مفاد کی فکر ہے غریبوں کی نہیں ۔وزیراعظم نے کہاکہ مہا ملاوٹی لوگ کچھ ذاتوں کو غلام سمجھتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ وہ جیسے کہیں گے اس ذات کے لوگ ویسے ہی کریںگے ۔ یہ لوگ بھول رہے ہیں کہ جب ملک کی بات آتی ہے تب ہم سب پہلے ہندوستانی ہوتے ہیں بعد میں کچھ اور ۔ انہوں نے اپوزیشن پر حملہ کرتے ہوئے کہاکہ یہ وہ لوگ ہیں جو دہائیوں تک غریبوں کے نام پر ووٹ اور بڑے بڑے عہدے حاصل کئے لیکن جب کام کرنے کی باری آئی تو سب سے پہلے غریبوں کو ہی بھول گئے ۔یہ لوگ غریبی سے ہی نکلے تھے لیکن ان لوگوں نے آج ہزاروں کروڑ کی املاک جمع کرلی ہے ۔ مسٹر مودی نے کہاکہ سیاست میں اتنی تنخواہ کب سے ملنے لگی کہ آپ اربوں کھربوں کے مالک بن جائیں۔ ان لوگوں نے عوام کے پیسے لوٹ کر اپنے لئے بڑے ۔ بڑے بنگلے بنائے اور لاکھوں روپے کی گاڑیاں خریدیں۔ انہوں نے کہاکہ دوسری جانب ان کا یہ خادم گجرات میں سب طویل وقفے تک وزیر اعلیٰ رہا اور پانچ سال سے ملک کا وزیراعظم ہے لیکن ایک پل کیلئے بھی نہ ا س نے اپنے لئے جیا اور نہ ہی اپنے رشتے داروں کیلئے ۔ ان کے لئے 130 کروڑ ہندوستانی ہی ان کا کنبہ ہے ۔ وہ انہی کے لئے جیتے ہیں اور انہی کیلئے اپنی زندگی کھپا رہے ہیں۔وزیراعظم نے کہاکہ غریبی کی زندگی نے انہیں طاقت دی جس کی وجہ سے وہ غریبوںکیلئے اتنا کچھ کر پائے ہیں ۔ ان کی حکومت کے ہرمنصوبے کا مرکز گا[؟]ں اور غریب رہے ہیں۔ آزادی کے بعد پہلی بار ایسی حکومت ہے جس نے گا[؟]ں کے بارے میں اتنا سوچا اور کام کیا ہے ۔ ہر گا[؟]ں تک سڑک پہنچانے کے ہدف پر کام کر رہے ہیں ۔ گا[؟]ں میں رہنے والے ہر آدمی کے پاس اپنا بینک کھاتا ہو اس کی کوشش جن دھن یوجنا کے توسط سے کی ہے ۔ ڈاک گھروںکو بینک میں بد ل کر ہر گا[؟]ں تک بینک لے جانے کاکام کیا ہے ۔ گا[؟]ں میں رہنے والے ۔ دور دراز کے بچوںکو دھیان میں رکھ کر مشن اندر دھنش چلارہے ہیں۔ دہائیوں سے غریب پیسے کے فقدان میں علاج کیلئے تڑپتے تھے ۔ ان کی حکومت نے اس تکلیف کو سمجھا اور آج آیوشمان بھارت سامنے ہے ۔ جس میں غریب پانچ لاکھ روپے تک کا مفت علاج کراسکتا ہے ۔
 

تازہ ترین