تازہ ترین

دفعہ370کا خاتمہ ،فی الحال ناممکن

ریاست کی حساس صورتحال نے پالیسی کو عملانے سے روکا:نتن گڈکری

14 مئی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر//بھارتیہ جنتا پارٹی کے سینئر لیڈر اور مرکزی وزیر نتن گڈکری نے کہا کہ حساس ریاست ہونے کی وجہ سے بھارتیہ جنتا پارٹی ریاست کو حاصل خصوصی درجہ دفعہ 370کو ختم نہیں کرسکتی ۔ گڈکری نے کہا کہ ریاست سے بے روگاری ختم کرنے میں آرٹیکل ہی حائل ہورہا ہے جس کو ختم کرنا ضروری ہے ۔ انہوںنے کہا کہ پارٹی کے اس موقف کہ ریاست سے آرٹیکل کوختم کیا جائے گا ڈٹی ہوئی ہے تاہم فی الحال ایسا کرنا ممکن نہیں ہے کیوں کہ ریاست جموں و کشمیر ایک حساس ریاست ہے جہاں پر امن و قانون کی صورتحال کا معاملہ درپیش ہے ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیاکے مطابق بھارتیہ جنتاپارٹی کے سینئر لیڈر اور مرکزی وزیر نتن گڈکرے نے کہا ہے کہ ریاست جموںو کشمیر کو حاصل خصوصی دورجہ جوکہ آئین کے دفعہ 370کے تحت ریاست کو حاصل ہے کو فی الحال ختم نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ بھارتیہ جانتاپارٹی کا موقف ہے کہ ریاست سے مذکورہ آرٹیکل کو ختم کیا جائے تاہم لوک سبھا میں ارکان کی بڑی تعدادہونے کے باوجود بھی بھارتیہ جنتاپارٹی اس کو ختم نہیں کرسکتی کیوں کہ ریاست ایک حساس خطہ ہے جہاں پر امن و قانون کی صورتحال کو مد نظر رکھ کر ہے کوئی فیصلہ لیاجاسکتا ہے ۔ نتن گڈکری نے کہا کہ ریاست میں بے روزگاری ایک بڑا مسئلہ ہے اور اس کو ختم کرنے کیلئے یہاں پر انڈسٹری اور دیگر کارخانے قائم کرنا لازمی ہے تاہم ان کارخانوں اور انڈسٹریوںکیلئے درکار اراضی کو حاصل کرنے میں دفعہ 370حائل ہے اور دوسرے الفاظ میں اگر کہا جائے تو ریاست میں بے روزگاری کے خاتمہ میں مذکورہ دفعہ حائل آتا ہے ۔ صحافی کرن جوہر کے ساتھ ایک انٹرئویو میں کڈکری نے کہا کہ پارٹی کی پالیسی، فلاسفی یہ ہے کہ آئین سے اس دفعہ کو ہزف کیا جائے تاکہ ریاست ویگر ریاستوں کے مساوی ہو۔ گڈکری نے کہا کہ کشمیرمیں ہم مزید ہوٹل اور رستوران کھولنا چاہتے ہیں جیسے ’’ہوٹل تاج‘‘ اوبرارئے ‘‘وغیرہ لیکن مذکورہ آرٹیکل کی وجہ سے یہاں کوئی سرمایہ کاری کرنے کیلئے تیار ہی نہیں ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ریاست کا ایک بڑا مسئلہ بے روزگاری کا مسئلہ ہے جس کو ختم کرنے کیلئے ہم نے کئی انڈسٹریلوں کے ساتھ بات کی لیکن سب کا کہنا ہے کہ ’’لیز ‘‘پر اراضی حاصل کرنے میںکئی قانونی پیچدگیاں ہے اسلئے ریاست کی تعمیر و ترقی اور خوشحالی کیلئے اس ایکٹ کو ختم کرنا لازمی ہے البتہ بی جے پی فی الحال ایسا کچھ نہیں کرسکتی جس کی وجہ سے ریاست میں حالات مزید بگڑ جائیں۔( سی این آئی )