تازہ ترین

’’خشک برفباری‘‘ سے لوگ پریشان | شہر میں 1ہزارسے زائد نر روسی سفیدوں کو کاٹنے کی منظوری

14 مئی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

اشفاق سعید
  سرینگر // شہر سرینگر میں روسی سفیدوں کے درختوں سے نکلنے والی روئی کی وجہ سے شہریوں کو سخت پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے تاہم محکمہ سوشل فارسٹری کا کہنا ہے کہ شہر میں 1ہزار47 نر روسی سفیدوں کو کاٹنے کیلئے منظوری مل چکی ہے اور بہت جلد اُس کو کاٹنے کا کام شروع کیا جائے گا ۔شہر سرینگر میں ہر سو روسی سفیدوں سے نکلنے والے روئی کے گالوں کی وجہ سے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ روئی منہ اور ناک میں داخل ہونے کی وجہ سے لوگ مختلف بیماریوں میں مبتلاء ہوچکے ہیں۔ انتظامیہ نے اگرچہ روسی سفیدے کے درختوں کوکاٹنے کا کے احکامات صادر کئے تھے لیکن زمینی سطح پر ان احکامات پر عمل درآمد نہ ہونے کے نتیجے میںدرختوں کی بھر مار ہے جس کے نتیجے میں لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔محکمہ سوشل فارسٹری کے ریجنل ڈائریکٹر زبیر احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ شہر سرینگر میں محکمہ کے پاس صرف اڑھائی ہزار نر روسی سفیدے کاٹنے کے بغیر رہ گئے ہیں جن سے روئی نکلتی ہے اس میں بھی 1ہزار47 درختوں کو کاٹنے کیلئے اُن کی شناخت کی گئی ہے اور بولی کے بعد تین ماہ کے اندر اندر اُن کا بھی صفایا کیا جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ جو 15سو رہ گئے ہیں اُن کی شاخ تراشی کی جا رہی ہے کیونکہ اُن کو کاٹنے میں محکمہ کو مشکلات آرہی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ شہر میں باقی جو سفیدے ہیں وہ محکمہ شوشل فارسٹری کے نہیں ہیں ۔انہوں نے کہاکہ یہی موسم ہے جس میں یہ ظاہر ہوتا ہے کہ نر سفیدہ کون سا ہے اور مادہ کون سا ۔انہوں نے کہا کہ ہم نے جگہ جگہ لوگوں کو اُس کی جانکاری بھی فراہم کی ہے ۔