تازہ ترین

ٹیچر گریڈ ٹو تبدیلی میں تاخیراور تنخواہوں کی واگزار ی کامعاملہ

رہبر تعلیم ٹیچرز فورم کا 15 مئی کو جموں اور سرینگر میں احتجاج کا اعلان

21 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

سرینگر // رہبر تعلیم سے ٹیچرز کو گریڈ ٹو میں تبدیل کرنے کے عمل میں تاخیر اور دسمبر سے بند پڑی تنخواوں  کے خلاف جموں کشمیر رہبر تعلیم ٹیچرز فورم نے 25 مئی کو پریس کالونی سرینگر اور پریس کلب جموں میں احتجاج کی کال دی ہے۔ فورم نے یہ فیصلہ سرینگر میں منعقدہ ایک ایگزیکٹو اجلاس کے دوران لیا ۔یہاں جاری پریس بیان کے مطابق رہبر تعلیم ٹیچرز فورم کا ایک اجلاس سرینگر میں فورم چیئرمین فاروق احمد تانترے کی قیادت میں منعقد ہوا جس میں یہ فیصلہ لیا گیا کہ ٹیچر گریڈ ٹو کے تبدیلی کے عمل میں نامعلوم وجوہات کی تاخیر کے بعد صوبائی کمشنر کشمیر بصیر احمد خان کی فورم کو حالیہ میٹنگ میں15مئی تک تمام معاملات کے حل کی یقین دہانی کے باوجود ابھی تک یہ عمل شروع نہ کیا گیا ہے جبکہ اساتذہ کی تین ماہ کی بند پڑی تنخواہیں سٹیٹ ٹریجری سے واگزار نہ کئے جانے پر 25 اپریل کو جموں اور سرینگر میں اپنی جائز مانگوں کو لیکر احتجاج کریں گے ۔ فورم چیئرمین نے کہا کہ اگر چہ رہبر تعلیم سے ٹیچر گریڈ ٹو میں تبدیل کر نے کا عمل الیکشن سے قبل شروع کیا گیا تھا اور اس وقت یہ بھی  بتایا گیا تھا اس پر ضابطہ اخلاق کا کوئی بھی اثر نہیں پڑے گا لیکن اب کبھی ضابطہ اخلاق اور کبھی دوسرے بہانے بنا کر اس عمل کوتاخیر کا شکار بنایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انڈر گریجویٹ اور دوران سروس گریجویشن مکمل کر نے والے اساتذہ کو ٹیچر گریڈ ٹو میں لانے کا عمل ابھی تک شروع نہ کیا گیا ہے اور ہزاروں رہبر تعلیم اساتذہ کے علاوہ ہیڈ ٹیچر وں کی تنخواہیں مہینوں سے بند پڑی ہیں جس سے اساتذہ زبردست ذہنی و مالی مشکلات سے دو چار ہیں اور بار بار کی گزارشات کے باوجود ان کوخالی یقین دہانیاں دی جا رہی ہیں ۔