تازہ ترین

مڈل سکول ناڑ کوٹ مچکہ34برسوں سے عمارت کا منتظر

۔ 60بچوں کے بیٹھنے کیلئے صرف1کمرہ ،تعلیمی نظام بھی مفلوج

21 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

جاوید اقبال
 مینڈھر//تعلیمی زون ہرنی کی پنچائت کانڈی گلہوتہ کے گورنمنٹ مڈل سکول ناڑ کوٹ مچکہ کی حالت نہائت ہی خستہ ہے جس کی وجہ سے 60سے زائد بچوں کیلئے محکمہ تعلیم کی جانب سے دو کمرہ تعمیر کئے گئے ہیں تاہم ان میں سے ایک کمرہ سکولی ریکارڈ کیلئے رکھا گیا ہے جبکہ دوسرے کمرے میں آٹھ کلاسوں کے بچوں کو تعلیم فراہم کی جارہی ہے ۔مقامی لوگوں نے ریاستی انتظامیہ اور محکمہ تعلیم پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ وہ  جان بوجھ کر بچوں کا مستقبل تباہ کر رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ مذکورہ سکول 1984-85میں کھو لا گیا تھا جبکہ تب سے ہی اس سکول کی عمارت تعمیر نہیں کی گئی تھی ۔۔ان کا کہنا تھا کہ بچوں کو پڑھانے کیلئے سرکار نے 6 اساتذہ تعینات کئے ہوئے ہیں جن پر سرکار لاکھوں روپے خرچ کرتی ہے لیکن اس سب کے باوجود بارشوں کے دنوں میں بچوں کے بیٹھنے کیلئے جگہ ہی نہیں ہے ۔مقامی لوگوں نے محکمہ تعلیم سے سوال کرتے ہوئے کہاہے کہ 60طلباء ایک ہی کمرہ میں کیسے تعلیم حاصل کر سکتے ہیں ؟۔یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ مذکورہ سکول کی عمارت کی تعمیر کیلئے 7لاکھ79ہزار روپے دئیے گئے تھے لیکن جبکہ انتظامیہ کی جانب سے عمارت کی تعمیر کے سلسلہ میں 2لاکھ روپے خرچ کئے گئے تو اس وقت محکمہ جنگلات کی جانب سے عمارت کی تعمیر پر اعتراض کیا گیا جس کے بعد تعمیر کا مزید کام روک دیا گیا ۔سکول سے متعلق فائل ضلع ترقیاتی کمشنر کے دفترمیں پڑی ہوئی ہے لیکن انتظامیہ کی جانب سے فائل کی جانب گزشتہ 7برسوں سے کو ئی توجہ نہیں دی جارہی ہے جسکی  وجہ سے سکول میں زیر تعلیم بچوں کو کئی طرح کی مشکلات کا سامنا کرناپڑہا ہے ۔علاقہ کے سرپنچ نیاز خان نے محکمہ تعلیم کے اعلی افیسران کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاسکو ل کے نام پر 6کنال اراضی بھی رکھی گئی ہے لیکن اس کے باوجود بھی متعلقہ محکمہ بچوں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے میں پوری طرح سے ناکام ہو چکی ہے ۔انھوں نے محکمہ تعلیم کے اعلی آفیسران اور ریاستی گورنر سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ بچوں کے مستقبل کیلئے ان کو بنیادی سہولیات فراہم کی جائیں ۔