تازہ ترین

سب ڈویژنل مجسٹریٹ ڈورو پر حملہ

پولیس نے بالآخر کیس درج کرلیا

18 اپریل 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

عارف بلوچ
اننت ناگ//سب ڈویژنل مجسٹریٹ ڈورو اور چار دیگر سرکاری ملازمین پر فوجی اہلکاروں کی طرف سے مارپیٹ و سرکاری گاڑی کونقصان پہنچانے پر قاضی گنڈ پولیس نے بالآخر کیس درج کرلیا ہے۔اسسٹنٹ ریٹرننگ آفیسر غلام رسول وانی، جو ایس ڈی ایم ڈوروبھی ہیں، نے ڈلوچھ کے قریب شاہراہ پر پیش آئے واقعہ سے متعلق ایس ایچ او قاضی گنڈ کو تحریری طور پر اپنے آفس سے ایک چھٹی زیر نمبر SDM/D/ 2019-20/47-52 بھیجی تھی جس میں کیس سے متعلق ایف آئی آر درج کرنے کی استدعا کی گئی تھی۔لیکن رات دیر گئے تک قاضی گنڈ پولیس نے ایف آی آر درج نہیں کی تھی۔ ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ایس ڈی ایم کو منانے کی کوششیں کی گئیں لیکن انہوں نے ایسا نہیں کیا ، جس کے بعد مجبوراً پولیس نے کیس زیر نمبر61/2019زیر دفعات 341،323( غیر قانونی طور پر کسی کو روکنا اور مارپیٹ کرنا)آر پی سی کے تحت کیس درج کیا۔ایس ڈی ایم ڈورو کی طرف سے دی گئی عرضی میں واقعے کی تفصیلات فراہم کی گئی تھیں اور ایک فوجی اہلکار ونے کمار کی شناخت بھی ظاہر کی گئی تھی۔چھٹی میں کہا گیا ہے ’’شاہراہ پر جب میں نے اپنے ڈرائیور کو فوجی اہلکاروں کی طرف سے حملے سے بچانے کی کوشش کی تو انہوں نے (فوجی اہلکاروں نے) میری قمیض کا کالر پکڑ کر مجھے لاتیں مار مار کر اور گالیاں دے دیکر قریب 20میٹر تک گھسیٹا۔اسکے بعد مزید دو تین فوجی اہلکار آگئے اور انہوں نے دیگر 4ملازمین  کی بھی شدید مار پیٹ کی گئی، انہوں نے بندوقیں مجھ پر تان کر مجھے مارنے کی دھمکیاں دیں اور پھر ضلع مجسٹریٹ اننت ناگ کے جائے موقعہ پر آنے کے بعد ہی ہمیں چھوڑا گیا'۔