تازہ ترین

جنگ سے نفرت ہے ہمکو

3 مارچ 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

جنگ سے نفرت ہے ہمکو
ہم ہیں قائل عالمی سُکھ شانتی اور امن کے
جنگ سے نفرت ہے ہمکو    
ہم مُخالِف ایٹمی ہتھیاروں کے اور بَم کے ہیں
ہم مُخالِف خون میں ڈُوبے ہُوئے پَرچم کے ہیں
ہم مُخالِف خونِ ناحق اور شور و شَر کے ہیں
جنگ سے نفرت ہے ہمکو
نسلِ آدم سِسکے تڑپے معذور و مظلوم ہو
سُرخ سائے موت کے ناچیں بساطِ زِیست پر
ہم نہ ایسا ہونے دیں گے 
شعلے بھڑکیں لہلہاتے کھیتوں سے اُٹّھے دُھواں
سُوکھ جائے کوکھ اِس دھرتی کی اور یہ بانجھ ہو
ہم نہ ایسا ہونے دیں گے
لاش خود اپنی اُٹھائے کاندھوں پر ماتم کرے
تِلمِلائے فاقوں سے اِنسان گُھٹ گُھٹ کر مرے
ہم نہ ایسا ہونے دیں گے
مانگ ہو سُونی کِسی کی یا کِسی کی اُجڑے گود
جیتے جی مَر جائے کوئی ، کوئی ہو جائے یتیم 
ہم نہ ایسا ہونے دیں گے
کالی آندھی خوف و دہشت کی نہ چلنے دیں گے ہم
ہم نہ ویراں ہونے دیںگے پِھر کِسی آبادی کو
کیوں نئی دُنیا پُرانی ہو ، نئی ہی یہ رہے
خوبصورت ہے یہ دُنیا خوبصورت ہی رہے
کیوں تباہی اور بربادی سے ہو دو چار یہ
مانداِسکا رنگ روپ اب ہم نہ ہونے دیں گے پِھر
جنگ سے نفرت ہے ہمکو 
اب نہ ہونے دیں گے ہم اِنسانیت کو جاں بلب
سَر کُچل دیں گے عداوت کے مچلتے ناگ کا
طُوفان خاک و خوں کے پِھر واپس نہ آنے دینگے ہم
جنگ ہم ہونے نہ دیں گے اِس زمیں پر پِھر کہیں
جنگ سے نفرت ہے ہمکو
نسلِ آئندہ کو ہم بڑھنے نہ دیں گے اِس طرف
نسلِ آئندہ کو ہم پڑھنے نہ دیں گے یہ سبق
ہم ہیں قائل عالمی سُکھ شانتی اور امن کے
جنگ ہم ہونے نہ دینگے
جنگ سے نفرت ہے ہمکو
٭٭٭
نیاز جَیراجپُوری
۶۷؍جالندھری، اعظم گڑھ۔۲۷۶۰۰۱  (یُو۔پی۔)اِنڈِیا   
موبائل:  +919935751213 /9616747576