تازہ ترین

بنگلہ دیش میں ٹریول ایجنٹس سوسائٹی کشمیر کاروڈ شو اورسمینار

12 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیو ڈسک
سرینگر//ٹریول ایجنٹس سوسائٹی آف کشمیر نے بیرون ملکوں کے سیاحوں کو ریاست خاص طور سے وادی کی سیر کیلئے راغب کرنے کیلئے بنگلہ دیش میں ایک سمیناراور روڈ شو کا اہتمام کیا۔پیٹیوہال میں 10فروری کو منعقدہ اس سمینار اور روڈشو میں بنگلہ دیش کے200ٹریول ایجنٹس اور ٹور آپریٹرس کے علاوہ مقامی پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا سے وابستہ افراد نے شرکت کی ۔اس دوران شرکاء کو کشمیر کے بے مثال حسن کے سیاحتی مقامات کی جانکاری دی گئی ۔اس کے علاوہ بنگلہ دیش سیاحتی بورڈ کے حکام اور سیاحت سے وابستہ برادری کے ساتھ بھی میٹنگیں ہوئی جن کے دوران اصولی طور اس بات سے اتفاق کیاگیا کہ دونوں مقامات یعنی کشمیراور بنگلہ دیش کے درمیان سیاحت کو فروغ دیا جائے ۔ اس دوران میر انور صدر کشمیر ٹریول ایجنٹس سوسائٹی آف کشمیر نے کہا کہ ٹریول ایجنٹس ایسوسی ایشن آف کشمیرقدیم ترین ایسوسی ایشن ہے اور یہ سن1967میں قائم ہوئی اور اس وقت اس کے120 ٹور آپریٹرممبران ہیں۔ہم بنگلہ دیش آنے سے قبل بھارت کے20شہروں میں بھی گئے اورلوگوں کو کشمیر کی سیر پر آنے کی دعوت دی ،تاکہ وہ ہماری بہترین مہمان نوازی کا لطف اُٹھا سکیں ۔اطہریامین سیکریٹری جنرل ٹریول ایجنٹس سوسائٹی آف کشمیر نے کہا کشمیر اب ایک بہترین سیاحتی مقام کے طور اُبھررہا ہے جہاں کانفرنسوں اور کنونشنوں کیلئے اعلیٰ معیار کے ڈھانچے کی سہولیات مہیا ہیں ۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ برس کے دوران بھارت کے بڑے تجارتی اداروں اور بین الاقوامی کارپوریٹ ادارے سرینگر ،گلمرگ اور پہلگام میں اپنی کانفرنسوں کاانعقاد کرتے آرہے ہیں ۔اطہریامین نے کہا کہ کشمیر کو ایک بین الاقوامی سیاحتی مقام کے طور فروغ دینے کیلئے ریاستی محکمہ سیاحت ، ملکی اور غیرملکی سیاحوں کو راغب کرنے کیلئے سوشل میڈیا پر توجہ مرکوزکئے ہوئے ہے۔اس کے علاوہ میلوں کا بھی اہتمام کیاجاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم ملک میں بہترین ہیں اور ہمارا کوئی مقابلہ نہیں کرسکتا۔اطہر یامین نے کہا کہ جہاں تک انفراسٹرکچر کا تعلق ہے وہ یہاں کافی ہے ۔کشمیر گالف کیلئے ایک بہترین جگہ ہے ،میراث کے معاملے میں بھی ہمارا کوئی ثانی نہیں ہے ،یہاں بہترین شاپنگ کی جاسکتی ہے اور یہاں کے لذیذپکوان عالمی شہرت رکھتے ہیں۔اطہر یامین نے زوردیا کہ جموں کشمیر اتنا ہی محفوظ ہے جتنا دنیا کا کوئی اور مقام ہے۔لوگوں کو یوروپ جاکر خرچہ کرنے کی ضرورت نہیں ہے ۔انہیں اپنے سوئزرلینڈ یعنی کشمیر کی سیر کرنی چاہیے۔انہوں نے نیشنل کرائم ریکارڈس بیوروکی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں جرائم کی تعداد صفر کے برابر ہے اور یہ ہمارے ملک کا محفوظ ترین مقام ہے ۔2016سے سیاحوں کی آمد میں اضافہ ہوا ہے ۔