شاہراہ یکطرفہ طور پر کھول دی گئی

بالائی علاقوں میں بارشوں اور برفباری کا امکان

12 جنوری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

اشفاق سعید +محمد تسکین
 سرینگر// محکمہ موسمیات کی پیشگوئی کے عین مطابق جمعرات کی شام سے شروع ہوا برف باری اور بارشوں کا سلسلہ پیر پنچال کے آر پار بالائی علاقوں میںجمعہ کو بھی دن بھر وقفے وقفے سے جارہی رہا ۔ محکمہ موسمیات نے اگلے 24 گھنٹوں کے دوران وادی کے بالائی اور میدانی علاقوں میں ہلکے سے درمیانہ درجہ کی بارشیں اور برف باری کا امکان ظاہر کیا ہے ۔ جواہر ٹنل علاقے میں تازہ برف باری کے سبب سڑک پر پھسلن پیدا ہونے کے نتیجے میں شاہراہ کو احتیاطی طور پر گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند رکھا گیا تھا تاہم جمعہ کی صبح 18 گھنٹوں تک بند رہنے کے بعد شاہراہ پر درماندہ ٹریفک کو ہی چلنے کی اجازت دی گئی او ر اس دوران درماندہ ہوئے 12سو سے زیادہ مال بردار ٹرکوںاور درجنوں مسافر گاڑیوں کو ترجیحی بنیادوں پروادی کشمیر کی طرف جانے کی اجازت دی گئی۔ جمعہ کو جموں سے سرینگر کسی بھی گاڑی کو نہیں چھوڑا گیا تاہم موسم میں آئی تبدیلی کے بعد کشمیر سے جموں کی طرف600 سے زائید مسافربردار گاڑیوں کو چلنے کی اجازت دی گئی۔بانڈی پورہ سے عازم جان نے بتایا کہ گریز بانڈی پورہ سڑک کے جنوری میں بھی کھلنے کا کوئی امکان نہیں ہے کیونکہ رازدان ٹاپ پر 7فٹ تازہ برف جمع ہے۔ادھر کرناہ کپوارہ شاہراہ بھی ایک مرتبہ پھر گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند کر دی گئی ہے۔ شاہراہ پر تازہ ایک فٹ برف جمع ہے جبکہ کرناہ کی نستہ چھن گلی پر جمعہ کو دن بھر وقفے وقفے سے برف باری کا سلسلہ جاری رہا ۔کیرن کی پھرکیاں ٹاپ اور مژھل کی زیڈ گلی پر تازہ برف باری ہوئی ہے ۔اس دوران انتظامیہ نے لوگوں سے کہا ہے کہ وہ خراب موسم کے دوران پہاڑی علاقوں کا سفر کرنے سے گریز کریں کیونکہ ان علاقوں میں پسیاں اور پتھر گرنے کا اندیشہ رہتا ہے ۔ محکمہ کے مطابق خطہ چناب اور پیرپنچال کے بالائی اور میدانی علاقوں میں بھی ہلکے سے درمانہ درجہ کی برف باری ہوئی ہے ۔

تازہ ترین