چندریان2مشن اپریل۔مئی میں لانچ کیا جائے گا:اسرو

12 جنوری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

بنگالورو//ہندوستانی خلائی جانچ ایجنسی (اسرو ) چندریان 2-مشن کو حتمی شکل دے رہا ہے جو خلائی گاڑی کو اپنے ساتھ لے جائے گا۔ اس کو جاریہ سال اپریل یا مئی میں چھوڑا جائے گا۔ بنگالورو میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے اسرو کے صدرنشین کے سیون نے کہا کہ اس کو چھوڑنے میں قدرے تاخیر ہوئی کیونکہ ایجنسی بعض تجربات مکمل نہیں کرسکے ۔ پی ایس ایل وی گاڑی کا استعمال کرتے ہوئے اس سٹلائٹ کو اپریل کے آخری ہفتہ میں چھوڑا جائے گا جو لینڈر اینڈ روور (خلائی گاڑی ) کو چاند میں چھوڑنے کا بہتر مرحلہ ہے ۔ اس مشن کے آغاز کے لئے ونڈو موزوں وقت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ چندریان 2-’2017یا18میں چھوڑا جانے والا تھا تاہم دو مرتبہ اس کو ملتوی کیا گیا۔ ایجنسی نے اس کو جنوری میں چھوڑنے کا منصوبہ بنایا تھا۔ جنوری میں اس کو چھوڑا جانے والا تھا تاہم اسرو کے سرکردہ عہدیدار نے کہا کہ اپریل کے اواخر میں اس کو چھوڑا جائے گا۔ ڈاکٹرسیون نے کہا کہ اسرو 2018کے نصف سال تک کئی راکٹس کو چھوڑنے میں مصروف تھا۔ اسی لئے اس میں تاخیر ہوئی ۔ چندریان2-ان 32مشنس میں شامل ہے جن کی منصوبہ بندی سال2019کے لئے اسرو نے کی ہے ۔ وہیں دوسری جانب  اسرو نے اعلان کیا ہے کہ اس کے اسٹراٹیجک پارٹنرس ہندوستان ایروناٹکس لمیٹڈ( ایچ اے ایل ) اور لارسن اینڈ ٹبرو (ایل اینڈ ٹی ) نے یادداشت مفاہمت کی ہے تاکہ انڈسٹری کے ذریعہ پولار سٹلائٹ لانچ وہیکل کو تیار کیا جاسکے ۔ اسرو کے ریلیز میں کہا گیا کہ اس نے انڈسٹری کے ذریعہ پی ایس ایل وی کی تیاری کا ایکشن پلان شروع کیا ہے اور حکومت نے اس تجویز کو منظوری دیدی ہے ۔ اس تجویز کے سلسلہ میں ایچ اے ایل اور ایل اینڈ ٹی نے پی ایس ایل وی کے مرحلوں کو حقیقت میں تبدیل کرنے اور اس کے سامان کی اسرو کو سپلائی کے لئے یادداشت مفاہمت کی ہے ۔ پی ایس ایل وی کو اسرو نے تیار کیا ہے ۔ یہ خلائی گاڑی ریموٹ سنسنگ ’ نیوی گیشن ’ مواصلات اور گہرے خلائی مشن کے لئے کامیابی کے ساتھ بھیجی گئی ہے ۔ اس خلائی گاڑی کی بین الاقوامی مارکٹ میں اہمیت ہے کیونکہ بیرونی ممالک کے صارفین کے بڑی تعداد میں سٹلائٹس کو چھوڑنے میں اضافہ دیکھا گیا ہے ۔ساتھ ہی گھریلو سطح پر بھی اس کا استعمال کیا جاتا ہے ۔ مرکزی حکومت نے جی ایس ایل وی ایم کے 3کی نجی کاری ’ سمی ۔ کرائیواسٹیج کی تیاری ’گگن یان انسانی خلائی مشن اور دیگر عصری خلائی مشنس کو منظوری دی ہے ۔یو این آئی۔ 
 

تازہ ترین