سرینگر ۔ کرگل شاہراہ ہنوز بند

درماندہ مسافروں کو ضروری سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت

9 نومبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

کرگل//قانون سازکونسل کے چئیرمین حاجی عنائت علی نے یہاں ضلع افسروں کی ایک میٹنگ میں سرینگر۔ کرگل شاہراہ پر برف ہٹانے کے کام کا جائیزہ لیا۔میٹنگ میں ضلع کی سول اور پولیس افسران کے علاوہ متعلقہ ایجنسیوں کے حکام بھی موجود تھے۔میٹنگ کے دوران چئیرمین موصوف کو بتایا گیا کہ زوجیلہ درے کے دونوں اطراف برف ہٹانے کا کام شدو مد سے جاری ہے۔افسروں نے کہا کہ پروجیکٹ ونائیک نے زیرو پوائنٹ تک سڑک پر پہلے ہی برف ہٹائی ہے اور مذکورہ ایجنسی اس وقت پروجیکٹ بیکن کو اپنا تعاون دے رہی ہے۔میٹنگ میں مزید بتایا گیا کہ شاہرا ہ پر برف ہٹانے کے لئے اضافی نفری اور مشینری کو کام پر لگایا گیا ہے۔حاجی عنائت علی نے کہا کہ وہ بارڈر روڈ آرگنائیزیشن کے ساتھ رابطے میں ہیں اور برف ہٹانے کے تعلق سے ضروری جانکاری حاصل کر رہے ہیں۔چئیرمین موصوف نے افسران کو ہدایت دی کہ وہ مینی مرگ، شیطانی نالہ، زیرو پوائنٹ اور کیپٹن موڈ جیسے حساس مقامات پر متعلقہ عملے کو تعینات کریں تا کہ گاڑیوں کی بلا خلل نقل و حمل کو جاری رکھا جاسکے۔چیئرمین موصوف نے متعلقین کو ہدایت دی کہ وہ سڑک کوکھولنے کے بعد پہلے چھوٹی گاڑیوں کو چلنے کی اجازت دیں جس کے بعد بڑی گاڑیوں اور فوجی کانوائے کو چلنے کی اجازت دی جانی چاہئے۔حاجی عنائت علی نے درماندہ مسافروں کے لئے ضلع انتظامیہ کی جانب سے کئے گئے انتظامات کے بارے میں تفصیلات طلب کیں۔ انہوں نے ان مسافروں کو ہر ممکن سہولت فراہم کرنے کے احکامات دیئے۔میٹنگ میں موجود افسروں نے حاجی عنائت علی کو جانکادی دی کہ کرگل اور واکھا سے دراس تک کے علاقہ میں تقریباً600 بڑی گاڑیاں اور1500 مسافر درماندہ ہیں جنہیں قیام و طعام کی سہولیات کھری سلطان جو سٹیڈیم اور دراس میں عارضی کیمپوں میں فراہم کی جارہی ہے۔افسروں نے کہا کہ درماندہ مسافروں کو جیکٹ اور ضروری سازو سامان بھی فراہم کیا جارہا ہے۔دریں اثنا چیئرمین موصو ف نے آنے والے موسم سرما کے دوران کرگل ضلع کی مختلف سڑکوں سے برف ہٹانے کے لئے جامع منصوبہ ترتیب دینے کی ہدایت دی۔

تازہ ترین