تازہ ترین

جگر پورہ کپوارہ میں قے واسہال کی یلغار

مریضوں کی تعداد500 تک پہنچ گئی:محکمہ صحت

11 اگست 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

اشرف چراغ
کپوارہ// ناصاف پانی کی سپلائی سے جگرپورہ کپوارہ کاوسیع علاقہ یرقان بیماری کی لپیٹ میں آنے سے مقامی آبادی میں سخت تشویش کی لہر پھیل گئی ہے ۔اس دوران محکمہ صحت نے حالات کی سنگینی کے مد نظر علاقے میں طبی ٹیمیں روانہ کی ہیں جو مریضوں کو علاج و معالجہ فراہم کرنے سے اس وبائی بیماری کی وجوہات کا پتہ لگا رہے ہیں ۔بلاک میڈیکل آفیسر کپوارہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔انہوں نے لوگوں کو مشورہ دیا کہ وہ پانی ابال کراستعمال کریں ۔معلوم ہوا ہے کہ جمعہ کی صبح جگر پورہ علاقہ میں سینکڑوں لوگ دست اور قے کی بیماری میں مبتلا ہوگئے ہیں ۔محکمہ صحت نے ضلع انتطامیہ کی ہدایت پر ہنگامی طورطبی ٹیمیں تشکیل دے کر انہیں متاثرہ علاقوں کی طرف روانہ کیاہے ۔ معلوم ہوا ہے کہ دن بھرضلع اسپتال کپوارہ میں200 مریضوں کو علاج و معالجہ فراہم کیا گیا جبکہ دیگر مریضوں کو سرکاری ہائی سکول جگر پورہ ،سب سنٹر اور دارلعلوم جگر پورہ میں علاج و معالجہ کے لئے پہنچایاگیا ۔بلاک میڈیکل آ فیسر کپوارہ ڈاکٹر فرید احمد شاہین نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ انہو ں نے جگر پورہ جاکر صورتحال کا جائزہ لیا ۔انہو ں نے بتا یا کہ مریضوں کی تعداد 500 تک پہنچ گئی ہے لیکن محکمہ صحت کی بروقت کاروائی کے بعد صورتحال پر کسی حد تک قابو پا لیا گیا جبکہ مریضوں کو جگر پورہ سے کپوارہ لانے کیلئے کئی ایمبو لنس گاڑیو ں کو بھی کام پر لگایا ہے۔انہو ں نے کہا کہ لوگو ں کو گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے تاہم علاقہ کے لوگ پینے کا پانی ا بال کر استعمال کریں ۔ڈاکٹر فرید شاہین نے مزید بتا یا کہ نا صاف پینے کا پانی استعمال کر نے کی وجہ سے بیماری پھیل گئی ہے ۔انہو ں نے کہا کہ علاقہ میں ایک واٹر سپلائی سکیم ہے جس میں ناصاف پانی شامل ہوا ہے۔انہو ں نے یہ بھی کہا کہ اس پانی کے نمو نے حاصل کئے گئے تاکہ انکی جانچ کی جائے گی ۔